خواتین کیلئے مخصوص نشستوں پر قبائلی ضلع سے خواتین نے صوبائی اسمبلی کے لیے کاغذات نامزدگی حاصل کرلیے

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp
خیبرپختونخوا اسمبلی کی خواتین کیلئے مخصوص نشستوں پر قبائلی ضلع سے ٹرائبل یوتھ مومنٹ فیمل ونگ کی جنرل سیکرٹری بشریٰ محسود نے صوبائی اور  ضلع باجوڑ سے تعلق رکھنے والی پاکستان تحریک انصاف کی ماریہ کامران نے  الیکشن کمیشن آفس پشاور میں کاغذات نامزادگی جمع کرا دیے
 
بشریٰ محسود ایم فل سکالر اور انصاف سٹوڈنٹس فیڈریشن خواتین ونگ ہزارہ یونیورسٹی کی بانی اور پہلی صدر ہیں، پچھلے کئی سال سے قبائلی اضلاع کی خواتین کیلئے مختلف پلیٹ فارمز سے آواز اٹھا رہی ہیں اور قبائلی اضلاع کے مسائل پر ان کے کئی کالمز مختلف اخباروں اور بین الاقوامی ویب سائٹس پر پبلش ہو چکے ہیں۔
 
دوسری جانب خواتین کیلئے مخصوص نشستوں پر قبائلی ضلع باجوڑ سے تعلق رکھنے والی پاکستان تحریک انصاف کی ماریہ کامران نے کاغذات نامزدگی حاصل کرلیے۔
 
ماریہ کامران ماسٹر ڈگری ہولڈر ہیں، ان کے شوہر کامران خان پاکستان تحریک انصاف باجوڑ کے اھم اور شعلہ بیان رہنماوں میں شمار ہوتت ہیں جن کی پارٹی کیلئے خدمات کسی سے پوشیدہ نہیں۔
 
ڈاکٹر حمید الرحمان کے مطابق باجوڑ سے مخصوص نشست پر ماریہ کے انتخاب سے علاقے کی تعمیر و ترقی میں مدد ملی گی، باجوڑ سے پاکستان تحریک انصاف کے دو ایم این ایز اور دو ایم پی ایز ہیں اور قاعدے کے مطابق مخصوص سیٹ باجوڑ کا حق ہے، ہم اہل باجوڑ عمران خان، وزیر اعلی اور پارٹی کے اعلی حکام سے اپیل کرتے ہیں کہ مخصوص کوٹہ پر ماریہ کی تقرری کرکے باجوڑ کی پسماندگی دور کرنے میں مدد کی جائے۔