ویزا پالیسی تبدیل، افغانیوں کو پاکستانی سرحد پر ویزا ملے گا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin
Burqa-clad Afghan refugees arrive at the United Nations High Commissioner for Refugees (UNHCR) repatriation center in Torkham, as they cross through the main border between Afghanistan and Pakistan to return to their home country after fleeing civil war and Taliban rule. / AFP / NOORULLAH SHIRZADA (Photo credit should read NOORULLAH SHIRZADA/AFP/Getty Images)

حکومت پاکستان نے افغان باشندوں کے لیے ویزا پالیسی تبدیل کر دی، افغانیوں کو اب پاکستانی سرحد پر ویزا ملے گا۔

تفصیلات کے مطابق حکومت پاکستان نے افغان باشندوں کے حوالے سے اہم فیصلہ کرتے ہوئے ویزا پالیسی تبدیل کر دی، افغانیوں کو کابل میں پاکستانی سفارتحانے کے چکر لگانے سے نجات مل گئی، اب انہیں سرحد پر ویزا ملے گا۔ نئی ویزا پالیسی کے تحت قیام اور ویزا کی مدت اور اندراج کی تعداد کو بھی بدل دیا گیا، سفارت اور کونسل خانہ ایک سال کے لیے وزٹ ویزا ملٹی پل انٹریز کے ساتھ جاری کرے گا۔

افغان شہریوں کو 5 سال کے لیے بزنس ویزا بھی مل سکے گا، جو پاکستان میں قابل توسیع ہوگا، افغان طلباء ایک سال کے بجائے اپنی تعلیم کے پورے عرصہ کے لیے ویزا حاصل کرسکتے ہیں۔

علاوہ ازیں طور خم بارڈر پر مریضوں کو 6 ماہ تک کا ویزا دیا جائے گا.

خیال رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے افغانستان سے تجارت کرنے والوں کے لیے بارڈر مارکیٹیں کھولنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ افغان امن عمل کامیاب ہوا تو خطے میں خوشحالی اور ترقی آئے گی۔