خیبر پختونخوا کابینہ نے ” کسان دوست پروگرام "کے اجراء کی منظوری

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبر پختونخوا کابینہ نے صوبے میں زراعت کی ترقی کیلئے ایک اہم اقدام کے طور پر” کسان دوست پروگرام "کے اجراء کی منظوری بھی دیدی جسکے تحت صوبے میں گندم کی سالانہ پیداوار 1.1ملین میٹرک ٹن سے بڑھا کر 1.6میٹرک ٹن کر دیا جائے گا۔

اس مقصد کیلئے کسانوں کو رعایتی نرخوں پر مستند بیچ او ر کھاد وغیرہ فراہم کئے جائینگے۔ جس کے لئے کابینہ نے ابتدائی طور پر 397ملین روپے گرانٹ کی منظوری بھی دیدی۔

اس کے علاوہ کابینہ نے ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان کے ذریعے سے تین لاکھ میٹرک ٹن اضافی گندم درآمد کرنے کی منظوری دیدی۔یہ گندم اس سے قبل خریدی گئی 1.5میٹرک ٹن گندم کے علاوہ ہے۔

کابینہ نے صوبے میں آٹے کی قیمتوں کو مستحکم کرنے اور صارفین کو سستی نرخوں پر آٹے کی بلا تعطل فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے گندم کی درآمد میں دوگنا اضافے کی منظوری دیدی۔کابینہ نے صوبے میں سیاحت کے فروغ کیلئے تین نئے ڈویلپمنٹ اتھارٹیز کے قیام کی بھی منظوری دیدی جن میں کیلاش ڈویلپمنٹ اتھارٹی، کمراٹ ڈویلپمنٹ اتھارٹی، کلام ڈویلپمنٹ اتھارٹی شامل ہے۔

اسی طرح کابینہ نے صوبے کے سیاحتی مقامات میں سیاحتی سرگرمیوں کے فروغ کیلئے 100مزید کیمپنگ پاڈزقائم کرنے کی منظوری دیدی۔آنے والے پاکستان سپر لیگ کرکٹ  ٹورنامنٹ کے بعض میچوں کی پشاور میں انعقاد کو یقینی بنانے کے سلسلے میں کابینہ نے حیات آباد سپورٹس کمپلیکس کی آپگریڈیشن کیلئے 400ملین روپے کی اضافی گرانٹ کی بھی منظوری دیدی۔

پختونخوا انرجی ڈویلپمنٹ آرگنائزیشن کے استعداد کار کو بڑھانے اور اس شعبے میں نجی سرمایہ کاری کو فروغ دینے کیلئے کابینہ نے پیڈو ایکٹ کی بھی منظوری دیدی۔اسی طرح کابینہ نے منرل ٹائٹلز سمیت محکمہ معدنیات اور معدنی ترقی کے دیگر امور میں شفافیت کو یقینی بنانے کیلئے محکمہ کے معاملات کو ڈیجیٹلائز کرنے کا فیصلہ کیا۔

مزید برآں کابینہ نے موشن فلمز کے سینسر بورڈ کو صوبائی حکومت کے پاس رکھنے کی منظوری دیدی تاکہ صوبے کی قدیم ثقافت کو صحیح معنوں میں اجاگر کرنے کیلئے معیاری مواد تیار کئے جا سکیں۔

کابینہ نے گنے کی کرشنگ میں تاخیر کی صورت میں شوگر ملوں پرعائد کئے جانے والے جرمانوں کی شرح کو کم ازکم پچاس ہزار اور زیادہ سے زیادہ پانچ لاکھ روزانہ سے بڑھا کر کم سے کم پانچ لاکھ اور زیادہ سے زیادہ پچاس لاکھ روزانہ کرنے کی منظور ی دیدی۔ کابینہ نے

(Khyber Pakhtunkhwa Minerals and Miner Minerals Temporary Permit rules 2020)کی بھی منظوری دیدی۔اسی طرح کابینہ نے مختلف معدنیات کے رائلٹی ریٹس میں اضافے کی بھی منظوری دیدی۔ جن میں بیرائٹس، بالکلے،بیکزائٹس،بینٹونائٹس، چائنہ کلے،ماربل، ڈولومائٹ وغیرہ شامل ہے۔

کابینہ نے ریلوے گروپ سے تعلق رکھنے والے گریڈ 18کے افیسر رضا حبیب کی بطور ڈائریکٹر جنرل گلیات ڈویلپمنٹ اتھارٹی تعیناتی کی بھی منظور ی دیدی۔

اسی طرح کابینہ نے صالحہ آصف کی بطور ممبر بورڈ آف ڈائریکٹرز خیبر بینک تعیناتی کی منظور ی دیدی۔

کابینہ نے درہ آدم خیل میں کوئلے کی کان میں پیش آنے والی حادثے میں جاں بحق ہونے والے ضلع شانگلہ کے رہائشی نیک محمد کے ورثا کیلئے 10لاکھ روپے کی معاوضے کی بھی منظوری دیدی۔