جنوبی وزیرستان : آج بھی سکولز بٹھک کے طور پر استعمال ہو رہے ہیں

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
آج سے ملک میں تعلیمی ادارے کھل گئے،لیکن جنوبی وزیرستان میں فاٹا انضمام کے بعد آج بھی سکولز بٹھک کے طور پر استعمال ہورہے ہیں۔ جنوبی وزیرستان تحصیل سراروغہ کے گاوں مرکی خیل جنتہ میں قائم مڈل سکول ٹھیکداروں کا ڈیرہ بن گیا ہے. سکول کی عالی شان بلڈنگ سڑک کنارے ہے جہاں سے آئے روز محکمہ کے افسران گزرتے رہتے ہیں لیکن بلڈنگ میں ٹھیکیداروں کے کیمپ افس بنانے پر کسی نے ایکشن نہیں لیا۔ بلڈنگ کو بچوں کے مستقبل کے کام آنے کے بجائے ٹھیکیداروں کے سامان رکھنے اور رہائش کا ڈیرہ بنا دیا گیا ہے۔ خیبر پختون خوا حکومت کا صوبے میں تعلیمی ایمرجنسی اور فاٹا انضمام کے بعد بھی جنوبی وزیرستان میں سات سو سے زائد سکولز ہیں جن میں آج بھی بھوت سکولوں اور بیٹھک سکولوں کی اکثریت ہیں۔