قبائلی اضلاع انتخابات: مخصوص نشستوں پر 3 ارکان کی کامیابی کا اعلامیہ جاری

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبرپختونخوا کے قبائلی اضلاع میں صوبائی اسمبلی کی 16 جنرل نشستوں پر انتخابات کی تکمیل کے بعد الیکشن کمیشن نے صوبائی اسمبلی کی مخصوص نشستوں پر 3 ارکان کی کامیابی کا اعلامیہ جاری کردیا ہے۔

واضح رہے کہ قبائلی اضلاع میں صوبائی اسمبلی کے انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف نے سب سے زیادہ 6 سیٹیں حاصل کی تھی اس کے علاوہ 2 آزاد اُمیدواروں نے بھی تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کرلی تھی۔

اس کے ساتھ ساتھ جمعیت علماء اسلام (ف) اور بلوچستان عوامی پارٹی میں شمولیت اختیار کرنے والے الحاج شاہ جی گل آفریدی گروپ نے 3،3 جبکہ عوامی نیشنل پارٹی اور جماعت اسلامی نے ایک ، ایک سیٹ حاصل کی۔

فارمولے کے مطابق خواتین کی مخصوص 4 نشستوں پر تحریک انصاف کے حصے میں 2 جبکہ جمعیت علماء اسلام (ف) اور بلوچستان عوامی پارٹی کے حصے میں ایک، ایک سیٹ آیا۔

الیکشن کمیشن نے خواتین کی مخصوص نشستوں پر پاکستان تحریک انصاف کی انیتا محسود جبکہ جمعیت علماء اسلام (ف) کی نعیمہ کشور کی کامیابی کا اعلامیہ جاری کردیا ہے اسی طرح اقلیتوں کی نشست پر تحریک انصاف کے ولسن وزیر کی کامیابی کا اعلامیہ جاری کیا گیا ہے۔

پاکستان تحریک انصاف اور بلوچستان عوامی پارٹی کی جانب سے فہرستیں جمع نہ ہونے کی وجہ سے اس وقت خواتین کی 2 مخصوص نشستیں خالی ہے جن کا اعلامیہ بعد میں جاری کیا جائے گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بلوچستان عوامی پارٹی نے خواتین کےلئے مختص مخصوص نشست پر قبائلی ضلع خیبر سے تعلق رکھنے والی بصیرت خان شنواری کا نام فائنل کیا ہے۔

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ تحریک انصاف میں خواتین کی دوسری نشست پر اختلافات بھی سامنے آئے ہیں جس کی وجہ سے مخصوص سیٹ پر تاحال فیصلہ نہیں ہوا۔ خواتین کی دو مخصوص نشستوں پر اسلام آباد میں 11 خواتین کا انٹرویو کیا گیا جس میں ایک خاتون کا نام تو فائنل کرلیا گیا ہے تاہم دوسرے نام پر اختلافات جاری ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ آئندہ چند روز میں مخصوص نشست کےلئے دوسرا نام بھی الیکشن کمیشن کو ارسال کردیا جائے گا۔