ماربل کان حادثہ : متاثرین کیلئے امدادی پیکج میں اضافے کا اعلان

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبر پختونخوا کے ضلع مہمند کی تحصیل صافی کے علاقے زیارت میں ماربل کی کان میں دب کر مرنے والوں اور زخمیوں کیلئے امدادی پیکج میں اضافے کا اعلان کیا گیا ہے۔

وزیراعلٰی خیبر پختونخوا محمود خان نے مہمند سانحہ متاثرین کیلئے امدادی پیکج میں اضافے کا اعلان کیا ہے۔ جاں بحق افراد کے لواحقین کیلئے امدادی پیکج 5 لاکھ سے بڑھا کر 9 لاکھ کر دیا گیا ہے، جبکہ زخمیوں کو ایک لاکھ روپے فی کس امداد دی جائے گی۔

محمود خان کا کہنا تھا کہ آزمائش کی اس گھڑی میں متاثرین کو تنہا نہیں چھوڑیں گے، زخمیوں کو مفت طبی سہولیات دی جا رہی ہیں اور ریسکیو آپریشن میں مقامی کمیونٹی کے تعاون پر مشکور ہیں۔ ماربل کان میں دب جانے والے افراد کو نکالنے کیلئے امدادی کارروائیاں دوسرے روز بھی جاری ہیں۔

حکام کا کہنا ہے کہ پانچ افراد کے ملبے تلے دبے ہونے کا خدشہ ہے، جبکہ 22 افراد کی لاشیں نکالی جا چکی ہیں۔

کان بیٹھنے سے زخمی ہونے والے متعدد مزدور تاحال ہسپتال میں زیرِ علاج ہیں۔

تحصیل صافی کے علاقے زیارت میں گذشتہ روز سنگ مرمر کی کان اچانک بیٹھ گئی تھیں اور درجنوں مزدور ملبے تلے دب گئے تھے۔ مقامی افراد کے مطابق اس پہاڑ سے ماربل کی 5 سے 6 کانیں منسلک ہیں جو مقامی آبادی کیلئے بڑا ذریعہ روزگار ہیں۔

اس پہاڑ سے کچھ فاصلے پر رہائشی مکانات بھی ہیں لیکن وہ اب تک محفوظ ہیں۔ ڈی جی پرونشل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کا کہنا ہے کہ مزید افراد کو ملبے سے نکالنے کیلئے آپریشن جاری ہے، جبکہ  ضلعی انتظامیہ اور متعلقہ اداروں سے بھی رابطے میں ہیں۔

ڈی پی او مہمند کا کہنا ہے کہ ملبے میں بڑے بڑے پتھر موجود ہیں جنہیں صرف ہیوی مشینری کی مدد سے ہی ہٹایا جاسکتا ہے۔