باجوڑ: تقسیم ہند کے 73 سال بعد سکیورٹی چیک پوسٹ قائم

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

باجوڑ کی تحصیل برنگ کے علاقہ اصیل ترغا میں 73 سال بعد سکیورٹی چیک پوسٹیں قائم کر دی گئی ہیں۔ ابتدائی مرحلہ میں ایک جبکہ 2 مزید چیک پوسٹیں بھی قائم کی جائیں گی۔

ذرائع کے مطابق ضلع باجوڑ کے دورافتادہ اور پہاڑی سلسلوں میں واقع دشوار گزار اور نہایت پسماندہ تحصیل برنگ کے علاقے اصیل ترغا میں پاکستان کی آزادی کے 73 سال بعد سیکورٹی چیک پوسٹیں قائم کر دی گئی ہیں، پہلی بار 40 کروڑ روپے کی خطیر رقم سے دشوار گزار پہاڑوں میں ایک سڑک کی تعمیر بھی شروع کر دی گئی ہے۔

حالیہ دنوں میں اصیل ترغا کے عمائدین نے سیکٹر ہیڈ کوارٹر نارتھ، باجوڑ سکاٹس اور ضلعی انتظامیہ سے درخواست کی تھی کہ اس پسماندہ علاقے میں بھی سیکورٹی چیک پوسٹیں قائم کی جائیں اور اسی کڑی کے سلسلے میں پہلی سکیورٹی چیک پوسٹ کا قیام عمل میں لایا گیا ہے، آ نے والے دنوں میں دو مزیدچیک پوسٹیں بھی فعال کر دی جائیں گی۔

ان چیک ہوسٹوں کے قیام پر اصیل ترغاو کے لوگوں نے سیکٹر ہیڈ کوارٹر نارتھ، باجوڑ سکاٹس، ضلعی انتظامیہ اور باجوڑ پولیس کا شکریہ ادا کیا اور مستقبل میں اپنے تعاون کا بھی یقین دلایا اور کہا کہ اصیل ترغاو کی عوام اس بات کی توقع کرتے ہیں کہ ان چیک پوسٹوں کے قیام سے امن وامان کی صورتِ حال بہتر ہو گی اور علاقے کے مسائل کا سدباب ہو گا۔

علاقے کے عمائدین نے فرئنٹیر کور نارتھ سے پانی کا دیرینہ مسئلہ حل کرنے کی درخواست کی تھی، اسی سلسلے کی پہلی کڑی میں ہیڈ کوارٹر فرئنٹیر کور اور باجوڑ سکاٹس کے تعاون سے اصیل ترغا میں سپرے کے مقام پر ایک سولر ٹیوب ویل سسٹم کا کام مکمل ہونے کے قریب ہے، جس کی تکمیل پر اہلِ علاقہ کو پینے کا صاف پانی میسر ہو گا۔