ضلع کرم : تنخواہ نہ ملنے پر لیڈی سرچر کا ڈی سی آفس کے سامنے دھرنا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

تنخواہوں کی عدم ادائیگی پر ضلع کرم کی لیڈی سرچر (تلاشی لینے والی خواتین پولیس اہلکار) نے ڈی سی آفس کے باہر دھرنا دیدیا، مطاہرین کے مطابق مطالبات کی منظوری تک دھرنا جاری رہے گا۔

نمائندہ ٹی این این کے مطابق ضلع کرم میں 40 سے زائد ڈی سی آفس کے باہر احتجاجی دھرنا کے دوران مظاہرین نے مقامی انتظامیہ کے خلاف نعرے بازی بھی کی۔

اس موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے لیڈی سرچر کی رہنما صاحبہ بی بی نے کہا کہ ہمارے ساتھ گذشتہ ایک سال سے ناانصافی ہو رہی ہے، ہم ضلع کرم کی مختلف چیک پوسٹوں پر ڈیوٹیاں سرانجام دے رہی ہیں، سردی گرمی اور شدید برفباری کے دوران بھی ہم نے خیموں کے اندر ڈیوٹیاں سرانجام دیں لیکن اس کے باوجود ہمیں تنخواہیں نہیں دی جا رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ جب تک ہمیں تنخواہوں کی ادائیگی نہیں کی جاتی ہمارا دھرنا جاری رہے گا۔

صاحبہ بی بی کے مطابق اثر رسوخ رکھنے والوں کی نوکریاں مستقل کر دی گئیں جبکہ انہیں مستقل کرنا تو درکنار گذشتہ ایک سال سے تنخواہیں بھی نہیں دی گئیں، بارہا وعدوں کے باوجود ہم ابھی تک تنخواہوں سے محروم ہیں۔

اس موقع پر لیڈی سرچر تمامہ نے بتایا کہ پختون معاشرے میں عورت ذات گھر سے مجبوری کے بغیر نہیں نکلتی، ‘ھم غریب لوگ ہیں ان تنخواہوں کی آس میں ھم نے بہت زیادہ قرضے لئے ہیں، اب نوبت فاقوں تک پہنچ گئی ہے، اگر ہمیں تنخواہیں ادا نہ کی گئیں تو ہم بچوں سمیت ڈی سی آفس کے باہر بھوک ہڑتالی کیمپ لگائیں گے۔’

دوسری جانب مقامی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس مسئلے سے ہم واقف ہیں اور متعلقہ حکام کو بھی اس سلسلے میں آگاہ کر دیا ہے اور ان کی تنخواہوں کی ادائیگی کے لئے اقدامات اٹھائیں جائیں گے۔