ریونیو اتھارٹی کو گزشتہ سال کی نسبت 63 فیصد زیادہ محصولات وصول

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

مالی سال 2019-20 کے اختتام پر خیبرپختونخواہ ریونیواتھارٹی نے گزشتہ سال کے مقابلے میں 63 فیصد زیادہ محصولات وصول کیئے ہیں

خیبرپختونخواہ ریونیواتھارٹی سے جاری پریس ریلیز کے مطابق اتھارٹی نے مالی سال 2019-20 میں گزشتہ سال کے مقابلے میں خدمات پرصوبائی سیلزٹیکس میں 63فیصد زیادہ ٹیکس وصول کرکے مجموعی طور پر 17 بلین روپے کے محصولات اکھٹے کی جو کہ خوش آئند ہے۔

اس موقع پراتھارٹی کے ڈائریکٹر جنرل فیاض علی شاہ نے اخباری بیان جاری کرتے ہوئے واضح کیا کہ پچھلے سال ادارے نے مجموعی طور پر 10.4بلین تک محصولات اکھٹے کیئے تھے جبکہ امسال سب سے زیادہ محصولات پشاور ریجن نے اکھٹے کیئے .

خیبرپختونخواہ ریونیواتھارٹی نے مجموعی حجم 11.4بلین روپے سے زائید رہا جبکہ مردان ریجن284 ملین، ایبٹ اباد ریجن نے172ملین، جبکہ جنوبی ریجن نے208 ملین سے زیادہ کے محصولات اکھٹے کیئے جبکہ اتھارٹی نے ٓئیل اینڈ گیس کے شعبہ سے 1.2 بلین روپے جمع کیئے جبکہ ودہولڈنگ ایجنٹس سے 1.9 بلین تک کی وصولی کی گئی۔

خیبرپختونخواہ ریونیواتھارٹی کے ڈی جی کیپرا ، فیاض علی شاہ  کہا کہ کرونا وبا کے باوجود اہلکاروں کی محنت اور صوبائی وزیر خزانہ تیمور خان جھگڑا کی طرف سے دی گئی اصلاحات کی روشنی میں دیا گیا حدف پورا کرنا قابل تحسین ہے۔

انہوں نے مذید تفصیلات دیتے ہوئے کہا کہ اتھارٹی ٹیکس نیٹ کو مذید بڑھانے کے لئے کوشاں ہیں جس سے سوبائی محصولات میں مذید اضافہ ہوگا۔  ڈی جی کیپرا کے مطابق ان کا اصل حدف صوبے میں ٹیکس کلچر کو فروغ دینا اور صوبہ خیبر پختونخواہ کو مالی طور پر ایک مستحکم صوبہ بنانے میں اپناکردار ادا کرنا ہے۔