عامرے کیس : آئی جی پی سے افغان قونصل جنرل کی ملاقات

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

انسپکٹرجنرل آف پولیس خیبر پختونخوا ڈاکٹر ثناءاللہ عباسی سے افغان قونصل جنرل نجیب اللہ احمد زئی نے ملاقات کی جس میں باہمی دلچسپی کے اُمور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

اس موقع پر آئی جی پی نے افغان قونصل جنرل کو کل پشاور میں رونما ہونے والے پولیس تشدد کے افسوسناک واقعے کی تفصیل سے آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ قابل اعتراض ویڈیو کے منظر عام پر آنے کے بعد انہوں نے اس کا فوراً نوٹس لیتے ہوئے اس واقعے میں ملوث اہلکاروں کو فوری طور پر معطل کرنے اور گرفتار کرنے کا حکم دیا۔

آئی جی پی نے کہا کہ عوام کی جان و مال اور عزت و آبرو کا تحفظ ہر قیمت پر کیا جائے گا، قانون سے کوئی بالا تر نہیں، ۔ آئی جی پی نے افغان قونصل جنرل کو یقین دلایا کہ اس شرمناک واقعے میں ملوث عناصر کو ہر قیمت پر قرار واقعی سزا دی جائے گی۔

افغان قونصل جنرل نے اس واقعے کا فوری نوٹس اور بھر پور ایکشن لینے پر صوبائی حکومت اور خیبر پختونخوا پولیس کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ دونوں ہمسایہ ممالک کے مابین برادرانہ تعلقات قائم ہیں۔

انھوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ باہمی عزت و احترام پر مبنی تعلقات کو مزید فروغ دینے کے لیے مشترکہ اقدامات اُٹھائے جائیں گے۔

خیبر پختونخوا افغان مہاجرین کے اتاشی عبدالحامد جلیل اور سیکنڈ سیکرٹری پروٹوکول جوہر بھی اس موقع پر افغان قونصل جنرل کے ہمراہ موجود تھے۔