شمالی وزیرستان: مدرسے میں جاں بحق لواحقین میں امدادی رقوم تقسیم

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

شمالی وزیرستان کی تحصیل شیواہ میں دو روز قبل چھت گرنے سے جاں بحق آٹھ بچوں کے لواحقین کو فی کس تین تین لاکھ کے امدادی چیکس دے دیئے گئے جبکہ زخمیوں کو فی کس ایک لاکھ کے چیکس کی تیاری کی جارہی ہے۔

شمالی وزیرستان کی مقامی انتظامیہ کے ایک اہلکار کا کہنا ہے کہ منگل کے روز شیواہ کے علاقے زیر جان کوٹ میں دینی مدرسے میں درس قران کے دوران چھت گرنے سے جو آٹھ بچے جاں بحق ہوئے تھے ان کے لواحقین کو صوبائی وزیر برائے ریلیف، تعمیر نو اور ابادکاری اقبال وزیر اور ڈپٹی کمشنر شمالی وزیرستان نے بغیر کسی تاخیر کے فی کس تین تین لاکھ کے چیکس دئے جبکہ زخمیوں کو فی کس ایک لاکھ کے چیکس بھی تیاری کے مراحل میں ہیں جو بہت جلد زخمی بچوں کے لواحقین کو حوالے کئے جائینگے۔

اس موقع پر اقبال وزیر کا کہنا تھا کہ گوکہ مذکورہ رقم ان بچوں کے نقصان کے مقابلے میں کچھ بھی نہیں تاہم حکومت نے جاں بجق بچوں کے لواحقین کے درد اور غم کو کم سے کم کرنے کیلئے فوری اقدام کیا جبکہ زخمی بچوں کے والدین کو بھی ایک ایک لاکھ روپے ائندہ ایک دو دن میں دئے جائینگے تاکہ وہ اپنے بچوں کا علاج صحیح طریقے سے کر سکے۔

یاد رہے کہ گذشتہ روز شمالی وزیرستان کے تحصیل شیواہ میں ایک دینی مدرسے کا چھت گرنے سے آٹھ بچے جاں بحق جبکہ سات بچے زخمی ہوئے تھے۔