شہریوں کے جسد خاکی واپس لانے کیلئے خصوصی طیارہ ریاض روانہ

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو ملک کا قیمتی اثاثہ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ خیبر پختونخوا سے بہت بڑی تعداد میں لوگ محنت مزدوری کی غرض سے بیرون ملک مقیم ہیں اور ملک کے لئے قیمتی زرمبادلہ کمانے میں اہم کردار ادا کررہے ہیں۔

میڈیا کو جاری ایک بیان میں محمود خان نے کہا  کہ کورونا کی موجودہ صورتحال کی وجہ سے بیرون ملک اور خصوصاً خلیجی ریاستوں میں مقیم خیبر پختونخوا کے شہریوں کو بہت زیادہ مسائل کا سامنا ہے، ہمیں ان کی مشکلات کا بھر پور احساس ہے اور ہم ان کی مشکلات کو کم کرنے اور انہیں جلد از جلد وطن واپس لانے کے لئے ہر سطح پر کوششیں کر رہے ہیں۔

وزیراعلیٰ نے کہا کہ اُن کی خصوصی درخواست پر وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب سے پشاور ائیر پورٹ کے لئے فلائٹس بحال کرنے کے احکامات جاری کئے ہیں اور فلائٹس کا سلسلہ کل سے باقاعدہ شروع ہو گیا ہے جبکہ آنے والے دنوں میں سعودی عرب سے پشاور ائیر پورٹ کے لئے فلائٹس کی تعداد میں مزید اضافہ کیا جائے گا جس سے خیبر پختونخوا کے باشندوں کو وطن واپسی میں آسانی ہو گی۔

انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب میں کورونا کی وجہ سے شہید ہونے والے خیبرپختونخوا کے شہریوں کے جسد خاکی واپس لانے کے لئے ایک خصوصی طیارہ بوئنگ 777 کل ریاض روانہ ہوگا جس کے بعد مزید دو بوئنگ 777طیارے سعودی عرب جائیں گے، اس کے علاوہ خلیجی ممالک سے وطن واپس آنے والے شہریوں کو درپیش مہنگے ٹکٹس کا مسئلہ بھی متعلقہ حکام کے ساتھ اٹھایا گیا ہے جسے بہت جلد حل کرلیا جائے گا، اسی طرح سعودی عرب میں پاکستانی سفارتخانے سے متعلق صوبے کے شہریوں کی شکایات اور تحفظات کو دور کرنے کے لئے بھی معاملہ متعلقہ حکام کے ساتھ اٹھایا گیا ہے۔

وزیراعلیٰ محمود خان نے اس سلسلے میں خصوصی دلچسپی لینے پر وزیراعظم عمران خان، وفاقی وزیر مراد سعید اور وزیراعلیٰ کے مشیر برائے قومی سلامتی معید یوسف کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت ضرورت پڑنے پر خیبرپختونخوا کے شہریوں کو وطن واپس لانے کے لئے خصوصی فنڈز فراہم کرنے اور پشاور ائیر پورٹ پر ہر قسم کے انتظامات کرنے کے لئے تیار ہے۔

دریں اثنا وزیراعلیٰ نے بذریعہ ویڈیو لنک وزیراعظم عمران کے زیر صدارت منعقدہ قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں شرکت کی اور کورونا کے حوالے سے آئندہ کا لائحہ عمل طے کرنے کے لئے صوبائی حکومت کی طرف سے تجاویز و سفارشات پیش کیں۔

وزیراعلیٰ نے کورونا کی وجہ سے بیرون ملک مقیم پاکستانیوں اور خصوصاً خلیجی ممالک میں خیبر پختونخوا کے شہریوں کو درپیش مسائل کو اجاگر کرتے ہوئے ان مسائل کے فوری حل اور ان کی جلد از جلد وطن واپسی کے مناسب اقدامات پر زور دیا۔