بھائی کے بعد میاں افتخارحسین بھی کورونا وائرس کا شکارہوگئے

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی ترجمان زاہد خان نے کہا ہے کہ مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخارحسین کورونا وائرس کا شکار ہوگئے اور انکے بھائی میاں محمد سریر کی موت بھی کورونا وائرس ہی کی وجہ سے ہوئی ہے۔

باچاخان مرکز پشاور سے جاری بیان میں زاہد خان نے کہا کہ میاں افتخارحسین نے خود کو آئسولیٹ کردیا ہے اور اس وقت وہ قرنطین ہے۔

مرکزی ترجمان نے کہا کہ میاں افتخار نے بھائی کے جنازے میں شرکت کی لیکن وہاں طبعیت بگڑنے پر انہیں جلد سے جلد لے جایا گیا۔ اس وقت وہ کسی سے بھی نہیں مل سکتے اور ان کا علاج جاری ہے۔ میاں افتخارحسین کی طبعیت قدرے بہتر ہے لیکن صحتیابی تک وہ قرنطین ہی رہیں گے۔

پارٹی کے ترجمان  نے تمام کارکنان سے اپیل کی ہے کہ وہ پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل کی جلد صحتیابی کیلئے دعا کریں اور انکے بھائی کی وفات پر تعزیت کیلئے آنے سے گریز کریں کیونکہ انکے خاندان کے تمام افراد کسی سے نہیں مل سکتے اور کورونا کے وبائی حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے احتیاطی تدابیر کا خیال رکھا جائے۔

انہوں نے کہا کہ صحتیابی کے بعد ہی وہ اس قابل ہوں گے کہ دعا یا تعزیت کیلئے آنیوالوں سے مل سکیں گے۔