خیبر پختونخوا میں عید سے قبل پورے ہفتے بازار کھلے رکھنے کا فیصلہ

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبر پختونخوا حکومت نے جمعہ، ہفتہ اور اتوار کو بازار کھلے رکھنے کے سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل درآمد کا فیصلہ کیا ہے، جبکہ دوسری طرف ایک ہفتے کے دوران پشاور میں 5 ارب روپے سے زائد کا کاروبار ہوا ہے۔

ڈیڑھ مہینے تک رونے دھونے والے شہریوں نے بڑی تعداد میں شاپنگ کی ہے۔ صوبے کے دیگر اضلاع سے تعلق رکھنے والے شہریوں نے بھی خریداری کیلئے پشاور کا رُخ کیا ہے۔  غیر سرکاری اعداد و شمار کے مطابق پشاور کے مختلف مقامات پر تاجروں نے 5 ارب روپے سے زائد کے کاروبار ایک ہفتے کے دوران کیا ہے۔

شہریوں نے جوتے، کپڑے، ریڈی میڈ گارمنٹس اور مٹھائی سمیت عیدالفطر کے حوالے سے دیگر خریداری کی ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق گورا بازار، شفیع مارکیٹ، پشاور کینٹ کے مختلف بازاروں، یونیورسٹی روڈ، تہکال، یونیورسٹی ٹاؤن اور پشاور سٹی کے 125 سے زائد چھوٹے بڑے بازاروں میں خریداری کی گئی، تاہم خریداری کے دوران ایس او پیز پر کوئی عمل درآمد نہیں ہوا۔

اعداد و شمار کے مطابق عید الفطر تک شہر میں 10 ارب روپے سے زائد کا کاروبار ہونے کے امکانات ہیں۔ لاک ڈاؤن کے دوران بھی کپڑوں اور جوتوں کی دکانیں کھلی رہیں، جبکہ اب شام کے بعد بھی دکانیں کھلی رہتی ہیں جس کے باعث خریداری میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔