خیبر پختونخوا میں کرونا وائرس نے سیاحت کی رونقیں ختم کر دیں

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبر پختونخوا میں کرونا نے سیاحت کی رونقیں ختم کر دیں جب کہ سیاحتی صنعت سے وابستہ افراد شدید مشکلات سے دوچار ہوگئے۔

ضلع سوات میں سیاحوں کی ایک بڑی تعداد رمضان کا مہینہ گزارنے کیلئے کرائے کے مکانات میں رہائش اختیار کرتے تھے اور چاند رات کو یہ تمام سیاح اپنے علاقوں کو واپس لوٹ جاتے تھے اور پھر عید کے دن سوات دوبارہ سیاحوں سے بھر جاتا تھا، تاہم کرونا وائرس کے باعث اب ضلع سوات میں سیاحتی مقامات ویران اور ہوٹلز خالی پڑے ہیں۔

سوات کا سیاحتی مقام مالم جبہ جہاں پہلے صرف گرمیوں میں سیاح آتے تھے اب وہاں سال کے بارہ مہینے سیاحت عروج پر رہتی ہے۔ مالم جبہ کے ایک مقامی رہائشی وزیر رحمٰن نے میڈیا کو بتایا کہ کرونا کی وجہ سے علاقے کے ترقی کا پہیہ رک گیا ہے اور اس صنعت سے وابسطہ لوگ گھروں میں بیٹھ گئے ہیں۔

سوات میں ہوٹل ایسوسی ایشن کے عہدہ داران نے بتایا کہ یہاں پر قائم ہوٹلز کے نرخ مری اور ملک کے دیگر سیاحتی مقامات سے پچاس فیصد کم ہیں کرونا وباء نے سوات کی مسکراہٹ ایک بار پھر چھین لی۔