شمالی وزیرستان: 14 پولیس اسٹیشنز اور 42 چوکیاں مزید بنائی جائیں گی

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبرپختونخوا کے قبائلی ضلع شمالی وزیرستان کے ڈپٹی کمشنر کمپاؤنڈ میں پولیس فورسز کا پہلا باضابطہ اجلاس منعقد ہوا جس میں پولیس افسران کے علاوہ کثیر تعداد میں اہلکاروں نے شرکت کی۔

ڈی سی جرگہ ہال میں منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر (ڈی پی او) شفیع اللہ گنڈا پور نے کہا کہ پولیو کمپین کے علاوہ حالیہ صوبائی انتخابات میں پولیس کی کارکردگی قابل تحسین ہیں، خیبرپختونخوا پولیس میں ضم شدہ لیویز اورخاصہ دار فورس کو باقاعدہ طور پر ٹریننگ دی جائے گی۔

ڈی پی او شفیع اللہ گنڈاپور نے کہا کہ وزیرستان میں 3 تھانے ہیڈکواٹر میرانشاہ، میرعلی اورسب ڈویژن رزمک تھانہ مکمل طور پر فعال ہیں، انضمام کے بعد لیویز اورخاصہ دار فورس کی پولیس میں رینک ٹو رینک انضمام کا عمل بھی مکمل ہوگیا ہے۔

انہوں نے پولیس جوانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ عوام کے ساتھ احسن طریقے سے پیش آیا جائے اور اپنی ڈیوٹی و حاضری یقینی بنائی جائے، اس کے علاوہ پولیس اہلکارعلاقے میں منشیات کی روک تھام اور عوام کو اپنے حقوق و انصاف دلانے میں بھی اپنا کردار ادا کریں۔

ڈی پی او نے مزید کہا کہ شمالی وزیرستان میں پولیس لائن کے علاوہ 14 تھانے اور 42 پولیس چوکیاں بنائی جائیں گی۔

اجلاس کے آخر میں ڈی پی او شفیع اللہ گنڈا پور نے قدرت اللہ خان کو ڈی ایس پی رینک کے بیجز بھی لگائیں۔