قبائلی ضلع کرم میں طوفانی بارشوں نے تباہی مچادی

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

پاراچنار شہر اور قبائلی ضلع کرم کے دیگر مختلف علاقوں میں مسلسل تین گھنٹے طوفانی بادو باراں کے بعد پہاڑی نالوں اور دریائے کرم میں شدید طغیانی آگئی، نالوں میں طغیانی سے متعدد علاقوں میں کچے مکانات گرگئے۔

اراچنار شہر کے اطراف اور دیگر علاقوں میں آمد و رفت کے راستے بند جبکہ گھروں میں پانی داخل ہونے کے باعث لوگ مکانات خالی کررہے ہیں، اس کے علاؤہ بجلی کا نظام بھی درہم برہم ہوگیا ہے۔

میڈیا کے ساتھ گفتگو میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر ڈاکٹر آفاق وزیر کا کہنا تھا کہ ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کر دی گئی ہے اور جہاں جہاں سے مدد کیلئے رابطہ کیا جارہا ہے وہاں امدادی ٹیمیں روانہ کی جارہی ہیں۔

ذرائع کے مطابق مختلف واقعات میں زخمی ہونے والے بائیس زخمیوں کو مختلف ہسپتالوں میں طبی امداد کیلئے پہنچایا گیا ہے۔

پاراچنار شہر میں بھی نکاس آب کا نظام درہم برہم ہوگیا، انتظامیہ اور مقامی لوگوں کی جانب سے مختلف علاقوں میں امدادی کارروائیاں جاری ہیں۔

ادھر ٹی این این زرائع کے مطابق سیاحتی مقام کمراٹ میں بھی موسلا دھار بارش نے سیلاب کی شکل اختیار کرلی، تھل میں رہائشی مکان سیلابی ریلے میں بہہ گیا۔

سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ سے کمراٹ شاہراہ بند مقامی افراد اور سیاح پھنس گئے جبکہ سیلابی ریلہ کلکوٹ کے طرف بڑھ رہا ہے جس کی وجہ سے مزید نقصان کا اندیشہ ہے۔

اس کے علاوہ دیربالا میں ہی دریائے عشیری میں آئے سیلابی ریلے سے دریا کے کنارے زیر کاشت زمینوں کو نقصان پہنچا ہے۔