کرونا کیسز : خیبر پختونخوا کے علاقوں میں لاک ڈاؤن مزید سخت

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کا کہنا ہے کہ جن علاقوں میں کرونا کیسز سامنے آرہے ہیں، وہاں لاک ڈاؤن کو سخت کیا جائے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کی زیر صدارت بذریعہ ویڈیو کانفرنس ڈویژنل کمشنرز کا اجلاس ہوا، جس میں ڈویژنل کمشنرز نے ڈویژن میں کورونا کی صورت حال پر بریفنگ دی۔

اس موقع پر محمود خان کا کہنا تھا کہ لاک ڈاون اور ایس او پیز پر عمل کو ہر صورت یقینی بنایا جائے، جس جگہ ایس اوپیز پر عمل نہیں ہو رہا، وہ بند کی جائیں۔

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا نے کہا کہ مساجد میں علماء کی مشاورت سے طے ایس او پیز پر عمل یقینی بنایا جائے، منتخب عوامی نمائندے ضلعی انتظامیہ سے رابطے رہیں۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ صورتحال کا مقابلہ کرنا سب کی مشترکہ ذمہ داری ہے۔ اجلاس میں کمشنرز نے اپنے اپنے ڈویژنز میں گندم کی خریداری کی صورتحال سے آگاہ کیا۔

محمود خان کا مزید کہنا تھا کہ کمشنر اور ڈپٹی کمشنر گندم خریداری کے اہداف کا حصول یقینی بنانے کے ساتھ رمضان کے مہینے میں پرائس چیکنگ پر خصوصی توجہ دیں۔

وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا نے مزید کہا کہ جن علاقوں میں کیسز سامنے آرہے ہیں، وہاں لاک ڈاؤن کو سخت کیا جائے۔