نوشہرہ، 59 کوئلہ مزدور 14 دن بعد قرنطینہ سے شانگلہ روانہ

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

ضلعی انتظامیہ نوشہرہ نے 59 کول مائنینگ کے مزدوروں کو 14 دن بعد قرنطینہ سے باعزت طریقے سے واپس اپنے آبائی ضلع شانگلہ رخصت کر دیا۔

نمائندہ ٹرائبل پریس  کے مطابق کول مائننگ کے 59 مزدوروں کو کرونا وائرس سے محفوظ رکھنے کیلئے ڈپٹی کمشنر نوشہرہ شاہد علی خان کی ہدایت پر قرنطینہ میں منتقل کر کے مقررہ مدت تک رکھا گیا۔

اس حوالے سے حکام کا کہنا تھا کہ اللہ تعالیٰ کے فضل و کرم سے سب کے کرونا ٹیسٹ منفی آئے اور کوئی کرونا وائرس کےخدشات ظاہر نہیں ہوئے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ مزدورں کو مکمل طبی معائنے کے بعد فوری طور پر اسسٹنٹ کمشنر پبی بینیش اقبال کی نگرانی میں تمام قانونی کارروائی کے بعد باعزت طریقے سے میں رخصت کیا گیا۔

اس موقع پر ضلعی ڈاکٹرز اور جنرل سیکٹری کول مائنز بھی موجود تھے۔

یاد رہے کہ 15 اپریل کو مردان میں تبلیغی جماعت سے تعلق رکھنے والے 6 غیر ملکی افراد نے کورونا کو شکست دے دی جنہیں ہسپتال سے پھولوں کے گلدستوں اور ہاروں کے ساتھ رخصت کیا گیا۔

مردان میڈیکل کمپلیکس کے میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر مختیار کے مطابق کورونا سے صحتیاب ہونے والوں میں 4 افراد کا تعلق جنوبی افریقہ، ایک کا چین اور ایک کا افغانستان سے تھا۔

ان چھ افراد کو 14 دن پہلے کورونا کے ٹسٹس مثبت آنے پر مردان میڈیکل کمپلکس کے آئسولیشن وارڈ میں میں داخل کردیا گیا تھا۔