پاکستان کا افغانستان کو یک طرفہ تجارت شروع کرنے کا اعلان

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

پاکستان نے کورونا وائرس کی روک تھام کے سلسلے میں افغانستان کے ساتھ معطل شدہ تجارت 10 اپریل سے دوبارہ یک طرفہ طور پر بحال کرنے کا اعلان کیا ہے۔

پاکستان کی وزارت خارجہ کے ترجمان کے ایک بیان کے مطابق تجارت کی بحالی کا فیصلہ افغان حکومت کی درخاست اور انسانی ہمدردی کی بنیاد پر کیا گیا ہے اور اس سلسلے میں کئے گئے فیصلے کے مطابق کارگو ٹرکیں اور کنٹینرز ہفتے میں تین دن یعنی پیر، بدھ اور جمعہ کو طورخم اور چمن بارڈر کے رستے افغانستان جا سکیں گی۔ تجارت کی بحالی کا یہ فیصلہ دونوں ممالک کے باہمی شراکت سے چند ضروری اور متفقہ طور پر مانے گئے شرائط کے تحت ہوا ہے

ترجمان خارجہ کا کہنا ہے کہ اس عالمی وبا کے وقت ایسا اقدام ثابت کرتا ہے کہ پاکستان ایک ہمسائے کی حیثیت سے اور پائیدار تعلقات کی بنا پر ہمیشہ سے افغان عوام کا خیرخواہ رہا ہے۔

خیال رہے کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان تمام بارڈر 16 مارچ سے بند کردئے گئے ہیں جبکہ گزشتہ روز طورخم بارڈر تین دن کے لئے ان افغان مہاجرین کے لئے کھول دیا گیا ہے جو واپس اپنے ملک جانا چاہتے ہیں جبکہ اس دوران سامان لے جانے والے ٹرانسپورٹ پر پابندی برقرار رکھی گئی تھی۔