جمرود قلعہ میں سرحد پار سے آنے والوں کے لئے قرنطینہ سنٹرز قایم

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

ضلع خیبر میں گورنمنٹ ڈگری کالج لنڈی کوتل سمیت جمرود قلعہ میں سرحد پار سے آنے والے لوگوں کے لئے قرنطینہ سنٹرز قایم کا دیا ہیں.  دونوں سنٹرز میں 1300 افراد رکھنے کی گنجائش ہے.

ضلعی انتظامیہ کو وفاقی حکومت سے ہدایت ملتے ہی افغانستان کے شہر کابل ، سپین بولدک اور جلال آباد میں پھنسے ہوئے ضلع خیبر کے تمام لوگوں کو یہاں کورنٹائین کیا جائے گا.

خیبر کے ڈپٹی کمشنر خیبر محمود اسلم وزیر نے کہا کہ دو آپشن پر غور کر رہے ہیں کہ یا تو ان کو یہاں 14 دنوں کے لئے رکھا جائے اور ان میں کورونا وائرس کی علامات کو دیکھا جائے اور یا مرحلہ وار ان کے لیبارٹری ٹیسٹ کئے جائے اور جن لوگوں کے ٹیسٹ منفی آتے ہیں ان کو گھر بھیج دیا جائے.

انھوا نے کہا کہ کسی بھی پاکستانی شہری کو کورانٹائین کئے بغیر گھر نہیں بھیجا جائے گا.

یاد رہے کہ افغانستان میں پھنسے ہوئے ضلع خیبر کے شہری اور دیگر پاکستانی شہری وفاقی حکومت کے آرڈر کا انتظار کرے اور جونہی اس بارے کوئی حکم ملتا ہے تو پھر سب کو ذکر شدہ مقامات میں کورانٹائین کیا جائے گا.