خیبرپختونخوا میں پولیو کے مزید تین کیسز سامنے آگئ

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

خیبر پختونخوا میں پولیو کے مزید 3 کیسز کی تصدیق کی گئی ہے جس کے بعد صوبے میں رواں برس یہ تعداد 18 اور ملک میں 36 ہو گئی ہے۔ ایمرجنسی آپریشن سنٹر (ای او سی) کے کوآرڈینیٹر عبدالباسط کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا میں پولیو کےتین نئے کیسز سامنے آگئے ہیں جو ضلع کرک ، لکی مروت اور ٹانک سے رپورٹ ہوئے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ کرک میں 6ماہ، ٹانک میں 19 ماہ کے بچے اور لکی مروت میں 9 ماہ کی بچی میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی۔ عبدالباسط کے مطابق متاثرہ بچوں کو حفاظتی قطرے نہیں پلائے گئے تھے، جبکہ متاثرہ بچوں کے نمونوں سے لیبارٹری ٹیسٹ میں پولیووائرس کی موجودگی کی تصدیق ہوئی۔

ان کا کہنا تھا کہ رواں سال کے دوران خیبر پختونخوا میں پولیو کیسز کی تعداد 18ہوگئی ہے۔ یاد رہے کہ دو روز قبل خیبر پختونخوا ور پنجاب میں 8 کیسز سامنے آگئے تھے جس کے بعد رواں برس پورے پاکستان میں سامنے آنے والے کیسز کی تعداد 33 ہوگئی تھی جو اب بڑھ کر 36 تک پہنچ گئی ہے۔

ان 8 کیسز میں 6 خیبر پختونخوا اور 2 کیسز پنجاب میں سامنے آئے تھے۔ رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ پشاور سے 2 اور قبائلی علاقے خیبر، بنوں، نوشہرہ اور لکی مروت سے ایک، ایک کیس سامنے آیا جبکہ فیصل آباد میں پولیو کے 2 کیسز رپورٹ ہوئے۔

خیبر پختونخوا میں اس سے قبل 14 مارچ کو ضلع خیبر سمیت مختلف علاقوں سے پولیو کے 13 کیسز رپورٹ ہوئے تھے۔ یاد رہے کہ 27 فروری کو بھی کے پی سے پولیو کے 3 کیسز سامنے آئے تھے جو پشاور، خیبر اور باجوڑ سے رپورٹ ہوئے تھے۔

گزشتہ برس ملک بھر سے پولیو کے 146 کیسز سامنے آئے تھے جبکہ 2018 میں مجموعی کیسز کی تعداد 12 اور 2017 میں صرف 8 تھی۔