موجودہ حالات میں سلام ہاتھ ملانے سے بہتر ہے، علماء کرام

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

محکمہ اطلاعات اور محکمہ اوقاف خیبر پختونخوا کے زیر اہتمام کرونا وباء کے سدباب کیلئے سول سیکرٹریٹ میں علماء کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس میں اسلامی تعلیمات کی روشنی میں موجودہ صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

اجلاس میں خیبر پختونخوا کے جید علماء سمیت سیکرٹری انفارمیشن امتیاز علی شاہ اور سیکرٹری اوقاف نے شرکت کی۔

علما حضرات نے کرونا وباء کے پیش نظر موجودہ صورتحال پر گفتگو کرتے ہوئے غریب طبقہ کیلئے زیادہ سے زیادہ زکواۃ، خیرات، عطیات اور صدقات دینے کی تلقین کی ہے۔

علما کرام نے اس بات پر بھی اتفاق کیا کہ موجودہ صورتحال میں چونکہ محنت مزدوری کرنے والے افراد صاحب استطاعت طبقے کے خیرات و صدقات کے مستحق ہیں لہٰذہ عوام رمضان سے قبل خیرات، صدقات و زکوٰۃ مستحق افراد کو عطیہ کرکے ان کے چولہے بجھنے سے بچائیں۔

علماء کرام کے مطابق عوام طبی ماہرین کے مشوروں پر من و عن عمل کرکے موجودہ حالات میں ہاتھ ملانے سے سلام کرنا بہتر ہے۔

علما کرام نے کرونا وبا سے جاں بحق افراد کی ایصال ثواب کیلئے دعا مانگتے ہوئے کہا کہ وباء میں جاں بحق افراد شہید کا درجہ رکھتے ہیں ۔

علماء کرام نے کرونا وباء کے خاتمے کے لئے حکومت کے شانہ بشانہ کھڑے ہونے کا مصمم اعادہ کیا اور جمعے کے خطبات مختصر اور سوشل میڈیا پر کرونا وباء سے متعلق آگاہی پر مبنی پیغامات عام کرنے پر اتفاق کیا۔