متاثرہ پٹرول پمپس مالکان کا معاوضوں کی عدم ادائیگی پر احتجاج

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

آل پیٹرول پمپس کے مالکان نے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے پورے شمالی وزیرستان کو بند کرنے کی دھمکی دی ہے اور موجودہ حکومت سے ناراضگی کااظہار کرتے ہوئے آپریشن ضرب عضب میں ہونے والے نقصانات کے ازالے کیلئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے۔

بنوں میں آل پیٹرول پمپس شمالی وزیرستان کے صدر گل رقیب خان, سیکرٹری اطلاعات گل بہادر اور فنانس سیکرٹری ملک سعید نور نے احتجاجی مظاہرے کے بعد میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ شمالی وزیرستان میں جو بھی شخص احتجاج کرتا ہے وہ حق پر ہوتا ہے کیونکہ آپریشن ضرب عضب میں ہر ایک وزیرستانی کا نقصان ہوا ہے، ہر ایک شخص کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا ہے اب وہ نقصان کی وجہ سے دووقت کی روٹی کیلئے سوچ رہا ہے اس کو اگر حکومت کی طرف سے نقصان کا معاوضہ نہ ملا تو وہ خود سوزی کرے گا کیونکہ اس کے پاس خودسوزی کے سوا  کوئی دوسرا راستہ ہے نہیں۔

اُنہوں نے کہا کہ ستر سے زائد پیٹرول پمپس کے مالکان کو آپریشن ضرب عضب کی وجہ سے نقصان پہنچا ہے جس کے ازالے ان پیٹرول پمپس کے مالکان نے اپنی فریاد متعلقہ حکام کو پہنچائی ہے مگر جس میں چند کو معاوضہ ملا ہے اور زیادہ تر پیٹرول پمپس کے مالکان کو معاوضے نہیں ملے ہیں۔

مظاہرین نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ جس کا جتنا حق بنتا ہے اور جس کاجتنا نقصان ہوا ہے اس کو اُسی نقصان کے مطابق معاوضہ دیا جائے اور معاوضے میں کمی نہ کی جائے۔

اُنہوں نے دھمکی دی کہ اگر ہمارے پیٹرول پمپس مالکان کو معاوضے نہ یئے گئے تو ہم پورے شمالی وزیرستان کو بند کردیں گے اور صوبائی اسمبلی کے سامنے بھی احتجاج کرنے سے گریز نہیں کریں گے۔