محسود بیلٹ میں پچھلے آٹھ سالوں سے زیر التواءتمام منصوبوں کی منظوری

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

خیبرپختونخوا کے وزیراعلیٰ محمود خان نے جنوبی وزیرستان کے محسود بیلٹ کے لئے سو کلومیٹر لمبی سڑک کی منظوری کا اعلان کرتے ہوئے محکمہ مواصلات و تعمیرات کو منصوبے کا پی سی ون فوری تیار کرنے کی ہدایت کی ہے اور کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کی طرف سے اعلان کردہ دوسری سو کلومیٹر لمبی سڑک جنوبی وزیرستان کے وزیر بیلٹ میں تعمیر کی جائے گی ۔

وزیراعلیٰ نے امن و امان کی مخدوش صورتحال کے باعث جنوبی وزیرستان کے محسود بیلٹ میں پچھلے آٹھ سالوں سے زیر التواءتمام منصوبوں کی بھی منظوری دے دی ہے ۔ ان منصوبوں کی تکمیل سے پورے جنوبی وزیرستان کے لوگوں کو آمدورفت کی بہتر سہولیات فراہم ہو جائیں گی اور علاقے کی پسماندگی کودور کرنے میں مدد ملے گی۔

بدھ کے روز ڈی آئی خان ڈویژن کے ترقیاتی منصوبوں کا جائزہ لینے کے لئے منعقدہ اعلیٰ سطح کے ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہاکہ جنوبی وزیرستان اور خصوصاً محسود بیلٹ کی پسماندگی کو دور کرنے پر خصوصی توجہ دی جائے گی اور علاقے کی ترقی کیلئے آنے والے دنوں میں میگا پراجیکٹس شروع کئے جائیں گے ۔

اُنہوں نے کہاکہ ٹانک سٹی میں پینے کے پانی کا دیرینہ مسئلہ حل کرنے کیلئے ایک الگ منصوبہ شروع کیاجائے گا۔ پشاور ڈی آئی خان موٹروے اور چشمہ رائٹ بینک کینال جیسے میگا منصوبوں پر ہمارے دور ہی میں کام کا آغاز کر دیا جائے گا۔

وزیراعلیٰ کے مشیر برائے اطلاعات اجمل وزیر، ایم این اے یعقوب ، ممبران صوبائی اسمبلی فیصل امین، اکرام اﷲ گنڈا پور،نصیر اﷲ اور انیتا محمود کے علاوہ ایڈیشنل چیف سیکرٹری شکیل قادر خان، وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری شہاب علی شاہ، متعلقہ محکموں کے انتظامی سیکرٹریوں، کمشنر ڈی آئی خان، ڈی آئی جی ڈی آئی خان، متعلقہ ڈپٹی کمشنرز اور دیگر اعلیٰ حکام نے اجلاس میں شرکت کی ۔

اجلاس کو ڈی آئی خان ڈویژن میں شروع کئے گئے ترقیاتی منصوبوں پر اب تک کی پیشرفت اور اگلے مالی سال کے ترقیاتی پروگرام کے لئے مجوزہ منصوبوں پر تفصیلی بریفینگ دی گئی جن میں صحت ، تعلیم ، پینے کے پانی ، سڑکوں ، زراعت ، آبپاشی ، سیاحت اور کھیلوں کے متعدد منصوبے شامل ہیں ۔

ضلع ٹانک میں پینے کے صاف پانی کی عدم دستیابی کو اہم مسئلہ قرار دیتے ہوئے وزیراعلیٰ نے پبلک ہیلتھ انجینئرنگ ڈپیارٹمنٹ کو ایک قابل عمل پلان بنا کر پیش کرنے کی ہدایت کی ۔

وزیراعلیٰ نے ڈی آئی خان ڈویژن میں پہلے سے جاری منصوبوں کی تکمیل اور نئے منصوبوں کے آغاز کیلئے تمام متعلقہ محکموں کو ٹائم لائنز مقرر کرنے اور اُن ٹائم لائنز کے اندر کام کی تکمیل کو ہر لحاظ سے یقینی بنانے کی ہدایت کرتے ہوئے حکام سے کہاکہ حکومت کے سترہ مہینے گزر گئے ہیں اب مجھے ٹھوس نتائج اور گراﺅنڈ پر عملی کا م چاہیے مجھے بریفینگ میں سب اچھا کی رپورٹ پر مطمئن کرنے کی کوشش نہ کی جائے بلکہ کام کر کے دکھایا جائے ۔