شمالی وزیرستان کے 496 متاثرہ خاندانوں کی واپسی شروع

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

پشاور پراونشیل ڈیزاسٹر مینجمینٹ اتھارٹی خیبر پختونخواہ نے شمالی وزیرستان کے اپریشن ضرب عضب کے متائثرین کی واپسی دوبارہ شروع کرنے کا اعلان کیا ہے. بحالی کے پہلے مرحلے میں میرانشاہ سے متصل ماچس گاؤ ں کے 496 متائثرین خاندانوں کی واپسی کا عمل 16مارچ سے 19مارچ تک جاری رہے گا۔

پی ڈی ایم اے کے دفتر سے جاری ہو نے والے ایک بیان میں ادارے کے ترجمان نے بتایا ہے کہ ماچس گاؤ ں کے متائثرین بکا خیل کیمپ کے پاس موجود واپسی مرکز میں رجسٹریشن کرینگے اور رضاکارانہ واپسی فارم پر دستخط کرینگے.

انہوں نے کہا کہ روزانہ کی بنیاد پر 150خاندان واپس کئے جائینگے اور چار دنوں میں ان کی واپسی کا عمل مکمل کیا جائے گا جبکہ واپس جانے والے ہر ایک خاندان کو ٹرانسپورٹ کیلئے دس ہزار جبکہ 25ہزار روپے بطور واپسی گرانٹ کے دئے جا ئینگے۔

انہوں نے کہا کہ پی ڈی ایم اے کی طرف واپسی پر ہر خاندان کو ہائی جین کٹ، گھریلو استعمال کی دیگر غیر غذائی اشیاء سمیت چھ ماہ تک اپنے علاقے کے اندر راشن بھی دیا جائے گا۔

ڈائریکٹر جنرل پی ڈی ایم اے پرویز خان ثبت خیل نے ماچس گاؤں کے تمام متائثرین خاندانوں کو ہدایت کی ہے کہ وہ بروقت اپنا رجسٹریشن کروائیں اور رضاکارانہ واپسی فارم کو پُر کریں .

انہوں نے ہدایت کی ہے کہ بکا خیل کیمپ کے پاس واپسی مرکز میں پی ڈی ایم اے کا عملہ موجود رہے گا تا کہ واپسی کا عمل بطریق احسن مکمل ہو سکے اور واپس جانے والے متائثرین خاندانوں کو حکومت کی طرف سے دی جانے والی مراعات انہیں مل سکے۔