ضم قبائلی تحصیل میں خیبر پختونخواہ کا پہلا کورنٹین فیسلیٹی سنٹر مکمل

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

ضم شدہ قبائلی سب ڈویژن درازندہ کے مقام پر ڈپٹی کمشنر ڈیرہ محمد عمیر کی نگرانی میں کورونا وائرس سے بچاﺅ کیلئے ضم شدہ قبائلی سب ڈویژن درازندہ کے مقام پر خیبر پختونخواہ کا پہلا”کورنٹین فیسلیٹی سنٹر“ تکمیل کے مراحل میں پہنچ گیا.

خیبر پختونخواہ کا پہلا مرکز جہاں ”محفوظ اور علیحدہ“ اصولوں کے تحت متعلقہ طبی امداد اور کرونا وائرس سے بچاﺅ کی تدابیر میسر ہو سکیں گی جبکہ اس سے قبل درازندہ ہی کے ٹائپ ڈی ہسپتال میں اس مد میں سکریننگ کی عارضی سہولیات کا مرکز قائم ہے۔

تا حال ٹائپ ڈی ہسپتال عام عوام کیلئے کھلا ہے تاہم باضابطہ اطلاق کے بعد عارضی طور پر پرانا سول ہسپتال صرف عام عوام درازندہ کے لیے کھلا رہے گا۔

ضم شدہ قبائلی تحصیل درازندہ اور ڈیرہ اسماعیل خان میں قائم کردہ ان مراکز کی نگرانی ڈپٹی کمشنر ڈیرہ محمد عمیر خود کر رہے ہیں جبکہ متعلقہ اسسٹنٹ کمشنرز، ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈیرہ اور ان کا عملہ بھی اس ضمن میں متحرک ہیں۔

یاد رہے کہ وفاقی اور صوبائی حکومت کی ہدایات کی روشنی میں ڈیرہ اسماعیل خان کی ضلعی انتظامیہ اور محکمہ صحت کے حکام کرونا وائرس سے بچاﺅ کی تدابیر کیلئے متحرک ہیں اور اس سسلسے میں مفتی محمودمیموریل ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ میں بھی 20 بستروں پر مشتمل آئیسولیشن وارڈ اور ہائی ڈپنڈنسی یونٹ بھی قائم کیا ہیں.