مہمند، پاک افغان سرحدی علاقہ ‘رحمت کور’ کلئیر قرار

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

پاک فوج کی بیش بہا قربانیوں کی بدولت پاک افغان سرحدی علاقہ رحمت کور کلئیر قرار دیدیا جس کے بعد سیکیورٹی فورسز نے علاقے کے 76 خاندانوں کو واپس آنے کی اجازت دیدی۔

ذرائع کے مطابق آج ضلع مھمند کے پاک افغان سرحدی علاقے رحمت کور میں پاک فوج اور سوات سکاؤٹس کی طرف سے رحمت کور کے 76 متاثرہ خاندانوں کا واپسی پر پرتپاک استقبال کیا گیا۔

اس موقع پاک فوج کے بریگیڈیئر رؤف شھزاد، ڈی سی مھمند افتخار عالم، ایم این نے ساجد خان، ایم پی اے عباس رحمان اور ملک جھانزیب کے علاوہ علاقے کے عمائدین سماجی و فلاحی کارکنوں کی کثیر تعداد موجود تھی۔

شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے رؤف شھزاد کا کہنا تھا کہ علاقے کے متاثرہ خاندانوں کی وطن واپسی پاک فوج کی قربانیوں کا نتیجہ ہے، عنقریب یہاں ترقیاتی کاموں کا سلسلہ شروع کیا جائے گا جو اس اے ڈی پی میں شامل ہیں، متاثرین کے چہروں پہ مسکراہٹ دیکھ کر ہمیں حقیقی سکون ملا ہے۔

ضلع مھمند کے ایم این اے ساجد خان مومند کا کہنا تھا کہ الیکشن کے دوران کمپین کے سلسلے میں ہمیں یہاں آنے کی اجازت نہیں دی گئی لیکن پاک فوج کی لازوال قربانیوں کی بدولت آج رحمت کور امن کا گہوارہ بن چکا ہے اور علاقہ سیر و سیاحت کے بارے بہترین آپشن ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہاں سکول، صحت اور سیر و سیاحت کے لئے ترقیاتی کاموں میں کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔

پروگرام کے اختتام پر سوات سکاؤٹس اور علاقے کے عوام کی طرف سے کھانے کا بہترین بندوبست کیا گیا تھا۔