گومل یونیورسٹی کے برطرف سربراہ مولانا صلاح الدین گرفتار

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

گومل یونیورسٹی میں طالبات کو جنسی طور پر ہراساں کرنے کے الزام پر شعبہ لسانیات کے برطرف سربراہ مولانا صلاح الدین کو گرفتار کر لیا گیا۔

ذرائع کے مطابق لیکچرار شہریار علیزئی کو دھمکیاں دینے پر تھانہ کینٹ پولیس نے بدنام زمانہ جنسی سکینڈل میں ملوث پروفیسر صلاح الدین کو گرفتار کر لیا ہے جبکہ پولیس کی جانب سے اپیل کی گئی ہے کہ ایسی تمام طالبات اور اساتذہ جن کو پروفیسر حافظ صلاح الدین کی جانب سے ہراساں کیا گیا وہ ڈسٹرکٹ پولیس یا محمد اقبال بلوچ ڈی ایس پی سے رابطہ کریں۔

پولیس نے لیکچرار شہریار کی مدعیت میں زیر دفعہ 250 ٹیلیگراف اور زیر دفعہ 166,500,506 پی پی کے تحت مقدمہ درج کر کے گرفتار کر لیا ہے۔

یاد رہے کہ 24 فروری کو گومل یونیورسٹی میں طالبات کو جنسی طور پر ہراساں کرنے والے شعبہ لسانیات کے سربراہ مولانا صلاح الدین کو عہدے سے برطرف کردیا گیا تھا۔