انسپکٹر جنرل پولیس کا قبائلی ضلع جنوبی وزیرستان کا پہلا دورہ

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

جنوبی وزیرستان کے صدر مقام وانا میں انسپکٹر جنرل خیبر پختونخواہ پولیس ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی نے پہلی بار جنوبی وزیرستان واناکا دورہ کیا.

اس موقع پر پولیس جوانوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں خاصہ دار فورس نے بڑی قربانیاں دی ہیں اور ملک کی سلامتی کیلئے پاک فوج کے ساتھ شانہ بشانہ لڑتے ہوئے اپنی جانوں کی نذرانے پیش کئے ہیں ہمیں انکا احساس ہے.

انہوں نے کہا کہ خاصہ دار فورس کی پولیس میں ضم ہونے کی نوٹیفکشن جلد جاری کیا جائیگا اور خیبر پختوانخواہ پولیس کی طرح ضم اضلاع میں پولیس کونئی گاڑیاں، یونیفارمز، اسلحہ و دیگر تمام مراعات فراہم کئے جائینگے.

اس دورے میں ڈی آئی جی ڈی آئی خان ڈویژن امتیاز شاہ،ڈی پی او جنوبی وزیرستان شوکت علی،اے ڈی سی جنوبی وزیرستان فہیداللہ اور اے سی وانا امیر نواز بھی ہمراہ تھے.

اس موقع پر پولیس جوانوں نے آئی جی پی خیبر پختونخواہ ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی کو جنرل سلامی پیش کی اور ساتھ ساتھ چھوٹے پچوں نے خوش آمدید کہہ کر پھولوں کے گلدستے بھی پیش کئے جبکہ افسران نے روایتی پگڑی بھی پہنائی۔

آئی جی پی کے پی کے ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی نے جنوبی وزیرستان وانا دورے کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ مجھے خاصہ دارفورس اور لیوز فورس کے مسائل کا ادراک ہے.

انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں انکے جتنے سپاہی شہید ہوگئے ہیں انکے ورثاء کو شہداء کے پیکج ملیں گے اور خیبر پختونخواہ پولیس کی طرح تمام تر سہولیات بھی فراہم کئے جائینگے۔

انہوں نے کہا کہ یہاں پر نئے تھانے اور چوکیاں بھی تعمیر کئے جائینگے تاکہ عوام کوانضمام کے ثمرات مل سکیں یہاں پر جتنے بھی مسائل ہیں انکے حل کیلئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائیں گے۔ تاکہ عوام کو اپنی حقوق انکی دہلیز پر مہیا ہو۔

انہوں نے مزید کہا کہ یہاں پر آمن قائم کرنے میں پاک فوج،خاصہ دار فورس اور علاقے کے لوگوں نے اہم کردار داکیا ہے اور ہم انکو قدرکی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔آئی جی پی نے کہا کہ خاصہ دارفورس کی ٹرینگ جلد شروع ہوجائیگی اور تمام سہولیات انکو فراہم کرینگے۔

پروگرام کے آخر میں جوانوں کی جانب آئی جی پی اورڈی آئی جی کو شیلڈ بھی پیش کئے۔