باجوڑ میں 5 فروری یوم یکجہتی کشمیر جوش و جذبے کے ساتھ منایا گیا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

ضلع باجوڑ میں بھی 5 فروری کو یوم یکجہتی کشمیر کو بڑے جوش و جذبے کے ساتھ منایا گیا۔

اس سلسلے میں پوری باجوڑ میں ریلیوں کاانعقاد کیا گیا۔ ڈپٹی کمشنر باجوڑ عثمان محسود نے مرکزی ریلی کی قیادت کی جس میں ڈی پی او شہاب علی شاہ و دیگر انتظامی آفسران سمیت کثیر تعداد میں لوگوں نے شرکت کی جو سول کالونی سے شروع ہوا اور خار بازار مین چوک پہنچ گئی۔

جبکہ دوسری بڑ ی ریلی درجنوں گاڑیوں پر مشتمل تھی جوجماعت اسلامی کے ایم پی اے سیراج الدین خان اور دیگر ضلعی رہنماؤں کے قیادت میں عنایت کلے سے خار بازارپہنچ گئی۔اسی طرح کئی چھوٹے چھوٹے قافلے بھی باجوڑ کے مختلف علاقوں سے ہوتے ہوئے خار بازار پہنچ گئے۔ جس نے باجوڑ کے مین چوک میں ایک بڑے ریلی کی شکل اختیار کی۔

ریلی سے باجوڑ کے حلقہ 102کے ایم پی اے سراج الدین خان، حلقہ 100کے ایم پی اے انورزیب خان، ڈپٹی کمشنر باجوڑ عثمان محسود، باجوڑ سیاسی اتحاد و پیپلز پارٹی کے صدر اورنگزیب انقلابی،تاجر برادری خار بازار کے صدر لعلی شاہ پختون یار،جماعت اسلامی کے ضلعی امیر مولانا وحید گل،عوامی نیشنل پارٹی کے صدر گل افضل، پی ٹی ائی کے رہنما ڈاکٹر حمید الرحمان،جمعیت علماء اسلام کے رہنما ء حاجی سید بادشاہ، آل تاجر برادری باجوڑکے صدر محمد حمید صوفی،عنایت کلے بازار تاجر برادری کے صداور دیگر رہنماؤں نے شرکت کی۔

ایم پی اے سرالدین خان نے ریلی سے اپنے خطاب میں کہا کہ مرحوم قا ضی حسین احمد نے 5فروری 1990کو اس دن کو یوم یکجہتی کشمیر کے طور پر حکومتی سطح پر منانے کے لئے حکومت سے منظور کرایا جس کا مقصد یہ تھا کہ کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی کیا جائے اور دنیا کو بھارت کے مظالم سے گاہ کیا جائے۔ اور اب ہر سال اس دن کو اسی مقصد کے تحت منایا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر پاکستان کی شہ رگ ہے اور کشمیر کے بغیر پاکستان مکمل نہیں ہے اس لئے تکمیل پاکستان کے لئے کشمیر کو بھارت سے آاد کرینگے۔

انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام اکیلے نہیں ہے اس کے ساتھ پاکستان کے بائیس کروڑ عوام ہے اور کشمیر کے آزادی کے لئے باجوڑ کے غیور عوام کسی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے اور جہاد کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے اقوام متحد سے پر زور مطالبہ کیا کے کشمیر یوں کے حق خود اردیت دینے کے لئے اپنے قرارداد پر فوری عملدرآمد کیا جائے۔