افغان حکومت کا پاکستانی گاڑیوں پر روڈ پاس کی شرط، ایکسپورٹ معطل

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

افغان حکام نے روڈ پاس کے بغیر گاڑیوں پر افغانستان داخل ہونے پر پابندی لگا دی جس کے بعد پاک افغان بارڈر طورخم پر ایکسپورٹ روک دیا گیا ہے۔

ٹرائبل پریس کے مطابق ایکسپورٹ میں تعطل کے باعث طورخم میں ایک ہزار سے زائد گاڑیاں کھڑی ہو گئیں، گاڑیوں کے مالکان اور ڈرائیورز کو مشکلات کا سامنا ہے جبکہ ٹرانسپورٹ یونین نے تین ماہ کی مہلت مانگی ہے۔

افغان حکام نے موقف اختیار کیا ہے پاکستان سے افغانستان کو داخل ہونے کے لئے اس گاڑی کو اجازت دی جائے گی جس کے پاس روڈ پاس موجود ہو کیونکہ افغانستان سے پاکستان کو داخل ہونے والی گاڑیوں کے داخلے پر روڈ پاس لازمی قرار دیدیا گیا ہے جس کا حق ہم بھی رکھتے ہیں۔

ٹرائبل پریس کے ساتھ اس حوالے سے گفتگو میں ذرائع کا کہنا تھا کہ یہ شرط گذشتہ ہفتے کے دن سے لاگو کی گئی ہے جس کے بعد ہزاروں پاکستانی گاڑیاں طورخم کے دونوں طرف کھڑی ہیں, پاکستان پہلے ہی روڈ پاس کی شرط افغان گاڑیوں پر لاگو کر چکا ہے۔

طورخم سے کسٹم کلئیرنگ ایجنٹس ذرائع نے بتایا کہ گزشتہ ہفتے کے روز سے افغان حکومت نے پاکستان کی طرف سے افغانستان جانے والی گاڑیوں پر روڈ پاس کی شرط لاگو کی یے جس کی وجہ سے ٹرانسپورٹرز کو مختلف قسم کی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

ذرائع نے کہا کہ اس شرط کو اچانک لاگو کرنے سے تجارت پر منفی اثرات مرتب ہو سکتے ہیں حالانکہ ضرورت اس بات کی ہے کہ تجارت میں اضافے کیلئے تاجروں اور ٹرانسپورٹرز کو سہولیات دی جائیں۔

ذرائع نے کہا کہ افغان حکام نے پاکستانی ٹرانسپورٹرز کو روڈ پرمٹ کے لئے مناسب وقت نہ دیکر ان کی مشکلات میں اضافہ کر دیا ہے جس کے باعث طورخم کے دونوں طرف ہزاروں گاڑیاں پھنس چکی ہیں، اس فیصلے سے ٹرانسپورٹرز کو سخت تکلیف ہو رہی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ طورخم میں گاڑیوں کو کلیئرنس اور گیٹ پاس جاری کئے گئے ہیں تاہم روڈ پاس نہ ہونے کے باعث افغانستان داخل نہیں ہونے دی جاتیں، گاڑی کھڑی کرنے سے سخت نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے۔

انہوں نے دونوں جانب حکومتوں سے مطالبہ کیا کہ اس معاملے کو حل کر کے جلد فیصلہ کریں، دوسری طرف ٹرانسپورٹ یونین نے افغان حکام سے اپیل کی انہیں تین ماہ کی مہلت دی جائے تاکہ تین ماہ میں اس کا بندوبست کیا جائے۔

اس حوالے سے طورخم ٹرانزٹ حکام نے رابطہ پر بتایا کہ افغان حکام نے پاکستان کے ٹرانسپورٹرز پر روڈ پاس شرط لاگو کیا ہے جس کی وجہ سے طورخم بارڈر پر گاڑیوں کی لمبی لمبی قطاریں لگ گئی ہیں، حکام بالا کو رپورٹ بھیج دی گئی ہے اور اب دیکھنا ہے کہ مسئلہ کتنے دنوں میں حل کیا جاتا ہے۔