”پختون قامی جرگہ” ایک تاریخی جرگہ ہوگا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی صدر اسفندیارولی خان کی جانب سے نوشہرہ جلسہ عام سے خطاب کے دوران اعلان کردہ ”پختون قامی جرگہ” 10مارچ بروز منگل صبح دس بجے باچاخان مرکز پشاور میں منعقد ہوگا جس میں تمام پختون رہنما اور مختلف شعبہ جات سے پختون نمائندوں کو شرکت کی دعوت دی جائے گی اور مرکزی صدر اسفندیار ولی خان تاریخی پختون قامی جرگے کی میزبانی کریں گے۔

یہ فیصلہ اے این پی کے مرکزی سینئر نائب صدر امیر حیدر خان ہوتی کی زیرصدارت ایک اجلاس میں کیا گیا۔

اجلاس میں اے این پی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخارحسین، صوبائی صدر ایمل ولی خان اور صوبائی جنرل سیکرٹری سردارحسین بابک نے شرکت کی، اجلاس میں اے این پی پنجاب، سندھ اور بلوچستان کے صدور سے بھی مشاورت کی گئی۔

اس موقع پر اے این پی کے مرکزی سینئر نائب صدر امیرحیدرخان ہوتی کا کہنا تھا کہ ”پختون قامی جرگہ” ایک تاریخی جرگہ ہوگا جس میں پختونوں کو درپیش تمام مشکلات اور مسائل پر تفصیلی بحث اور جرگہ کیا جائے گا اور جرگے میں شریک تمام ممبران کی تجاویز اور آراء کے نتیجے میں پختونوں کو درپیش مشکلات اور مسائل کے حل کیلئے لائحہ عمل بھی طے کیا جائے گا۔

امیرحیدرخان ہوتی کا کہنا تھا کہ پختونوں کو درپیش مشکلات اور مسائل متفقہ طور پر حل کرنے کی ضرورت ہے، پختون قومی جرگہ کے دوررس نتائج ہوں گے اور یہ تاریخی جرگہ پختونوں کی مشکلات اور مسائل کیلئے نیک شگون ہے۔

واضح رہے کہ اے این پی سربراہ اسفندیار ولی خان نے 20 جنوری کو نوشہرہ میں جلسہ عام سے خطاب کے دوران مرکزی سینئر نائب صدر امیر حیدر خان ہوتی اور مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخارحسین کو جرگہ منعقد کرانے کی ذمہ داری دی تھی۔