طورخم میں کاروبار کی بہتری لیے اہم اجلاس

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

طورخم میں کاروبار کی بہتری اور بیرونی مداخلت کو روکنے کے لئے خیبر چیمبر آف کامرس، کسٹم کلئیرنگ ایجنٹس اور ایکسپورٹرز و امپورٹرز نے ایک ساتھ کم کرنے کا عندیہ دے دیا

اس سلسلے میں خیبر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر کرنل صدیق آفریدی ، سینئر نائب صدر حاجی جابر شینواری ، جنرل سیکرٹری علی فیصل اور فاونڈرصدر سید جواد کاظمی کی سربراہی میں طورخم میں ایک اہم میٹنگ منعقد ہوئی جس میں کثیر تعداد میں کسٹم کلئیرنگ ایجنٹس اور ایکسپورٹرز و امپورٹرز نے شرکت کی.

اجلاس میں تاجروں کو درپیش مختلف مسائل پر تفصیل سے گفت و شنید اور مشاورت کی گئ جس میں درجہ ذیل فیصلے کئے گئے اور مطالبات پیش کئے گئے .

خرلاچی کی طرح طورخم سرحد پر بھی ہزاروں کی بجائے لاکھوں کرنسی کی اجازت دی جائے.

حکومت ایکسپورٹرز کو فائدہ اور تحفظ دے کیونکہ ایکسپورٹرز کی وجہ سے معیشت کا پہیہ چل رہا ہے.

قانونی طریقے سے ان لوگوں کا راستہ روکا جائے گا جو طورخم میں کاروبار کو تباہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں

کلیریکل غلطیوں کے لئے طریقہ کار بنایا جائے تاکہ مخالفین اس سے فائدہ نہ اٹھا سکے.

کسٹم کلئیرنگ ایجنٹس اور ایکسپورٹرز و امپورٹرز پاک افغان دوطرفہ تجارت اور ملک کی ترقی و خوشحالی میں بنیادی کر دار ادا کر رہے ہیں اس لئے ان کو طورخم میں مزید ریلیف دیا جائے گا.

انضمام کے بعد بھتہ خوری بند ہے اس لئے اس کی حوصلہ شکنی کی جائے گی اور کسی بھی فریق کی جانب سے بے جا مداخلت ، الزام تراشی اور بدنامی پر وارننگ اور قانونی چارہ جوئی بارے اتفاق ہوگیا.

گیٹ پاس کا معاملہ حل ہوا ہے تاہم مزید ریلیف دینا باقی ہے جو چاہتے ہیں،

اجلاس میں کہا گیا کہ کچھ لوگ پرانے سسٹم کو بحال کرنا چاہتے ہیں جو کہ اب ممکن نہیں ہے.

وی بک سے روایتی طریقے ختم ہوگئے اور کاروبار سنٹرلائزڈ ہوگیا ہے اس لئے اس کے لئے مزید سہولت دی جائے ، چیمبر آف کامرس کی مضبوطی سے ایجنٹس اور کاروبار مظبوط ہوگا.

آخر میں چیمبر کے صدر ، جی ایس اور نائب صدر نے شرکت کرنے پر تمام ایجنٹس اور ایکسپورٹرز و امپورٹرز کا شکریہ ادا کیا