خیبر پختون خواہ ہیلتھ کئیر کمیشن کے باجوڑ میں پرائیوٹ کلینکس پر چھاپے

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

ضلع باجوڑ میں خیبر پختون خواہ ہیلتھ کئیر کمیشن کے ٹیم نے مقامی انتظامیہ کے تحصیلدار عجم خان آفریدی کے ساتھ باجوڑ کے مشہور تجارتی مرکزعنا یت کلے بازار میں ڈینٹل کلینکس، میڈیکل کلینکس، میڈیکل لیبارٹریز سمیت میڈیکل سٹورز پر اچانک چھاپے مارے اور ان کے ریکارڈکو چیک کیا۔

ٹیم نے ایسے تین کلینکس کو سیل کر دیا جن کے پاس محکمہ ہیلتھ کے طرف سے فراہم کردہ قانونی دستاویزات موجود نہیں تھے۔ اور دوسرے کلینکس کے مالکان کو وارننگ دیا کہ اپنا ریکارڈ پندرہ دن میں درست کریں اور ہیلتھ کئیرکمیشن کے ساتھ رجسٹرڈ کریں ورنہ ان کے خلاف بھی سکت کاروائی ہوگی۔

انہوں نے دو کلینکس کے مالکان کو موقع پرجیل بھیج دیا۔ہیلتھ کئیر کمیشن کے ٹیم کے سربراہ سینئرڈرگ انسپکٹر ڈاکٹر سعید الرحمن نے اس موقع پربتایاکہ حکومت کسی کو لوگوں کے زندگی کے ساتھ کھیلنے کی اجازت نہیں دینگے۔

حکومت کے اس سلسلے میں بلکل واضح اور سخت پالیسی ہے۔ اور ایسے لوگوں کو کبھی بھی پریکٹس کی اجات نہیں دینگے جس کے پاس مطلوبہ قانونی دستاویزات اور اہلیت نہ ہو۔

انہوں نے مزید کہا کہ اب یہاں پر باقاعدگی کے ساتھ چھاپے مارے جائینگے اور اگر کسی کو بھی قانون دستاویزات کے خلاف پریکٹس کر نے کا مرتکب پایا گیا تو اس کے خلاف سخت قانونی کاروائی کرینگے اور اس کے ساتھ کوئی نر می نہیں برتی جائینگے۔

اس سے پہلے ہیلتھ کئیر کمیشن کے ٹیم نے باجوڑ کے تحصیل سلارزئی کے پشت بازارمیں بھی چھاپے مارے تھے۔

دوسرے طرف باجوڑ کے لوگوں نے ہیلتھ کیئر کمیشن کے ٹیم کے اس اقدام کو سراہا اور کہا کہ اس سے عطائی ڈاکٹروں سے لوگوں کو نجات ملی گی اور بیماریوں کے روک تھام میں مدد ملی گی۔

یاد رہے کہ قبائلی اضلاع کے خیبر پختون خواہ میں ضم ہونے کے بعد یہ پہلی دفعہ ہے کہ باجوڑ میں ہیلتھ کئیر کمیشن کے ٹیم نے چھاپے مارے ہیں اور مختلف کلینکس کو سیل کیا ہے۔