سوشل میڈیا پر عدلیہ مخالف مواد روکنے کیلیے کمیٹی قائم

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

لاہور ہائی کورٹ نے سوشل میڈیا پر عدلیہ کیخلاف پھیلائی جانیوالی جعلی خبروں اور پراپیگنڈا کیخلاف درخواست پر ڈائریکٹر ایف آئی اے کی سربراہی میں عدلیہ مخالف مواد روکنے کیلیے کمیٹی قائم کر دی، کمیٹی میں پی ٹی اے سمیت دیگر اداروں کے نمائندے شامل ہوں گے۔

چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مامون رشید شیخ نے سمیع درانی ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی، عدالت نے ریمارکس دیے کہ کمیٹی کے ممبران نے بتانا ہے کہ نامناسب مواد کی سوشل میڈیا پر تشہیر کو کیسے روکا جائے۔

چیف جسٹس نے کہا کہ آپ طریقہ کار وضع کریں عدالت آپ کو مکمل سپورٹ کرے گی، عدالتی حکم پر ڈائریکٹر ایف آئی اے عبدالرب نے پیش ہو کر عدالت کو بتایا کہ تین روز قبل عہدے کا چارج سنبھالا ہے، عدالتی احکامات اور قانون کے مطابق مواد روکنے کیلیے کارروائی کی جائیگی۔

درخواستگزار وکیل نے موقف اختیار کیا کہ عدلیہ کیخلاف منظم پراپیگنڈا کے تحت جعلی خبریں پھیلائی جارہی ہیں، عدلیہ کیخلاف مہم کیلیے سوشل میڈیا کا استعمال کیا جا رہا ہے جبکہ متعلقہ ادارے اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے میں ناکام ہیں عدلیہ مخالف توہین آمیز بیانات، خبروں اور پراپیگنڈا کرنیوالوں کیخلاف سخت کارروائی کا حکم دیا جائے۔