سکولوں میں 5 سو اساتذہ کی آسامیاں خالی – ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر ضلع اورکزئی

Share on facebook
Share on pinterest
Share on twitter
Share on linkedin
Share on whatsapp

ضلع اورکزئی کے طلباء کو سال 2018/2019 کی سکالر شپ نہیں ملی۔ ضلع اورکزئی میں 493 تعلیمی ادارے ہیں جس میں 2 مردانہ کالج اور 2 زنانہ کالج جبکہ صرف 3 ہائیر سیکنڈری سکول مردانہ ہیں، 31 ہائی سکول ہیں، مڈل 32 ہیں، 426 پرائمری سکول ہیں، گرلز ہائی سکولوں میں ایک سکول میں بھی ہیڈ مسٹریس نہیں ہے۔

سکولوں کی تعمیر و مرمت کیلئے فنڈز کی کمی کے ساتھ ساتھ 5 سو اساتذہ کی آسامیاں بھی خالی ہیں، 94 سکولوں کی عمارتیں 2008 سے اب تک تعمیر کی گئی ہیں مگر ان میں بالکل سٹاف نہیں ہے، عمارتیں خستہ حال ہو رہی ہیں۔ان خیالات کا اظہار ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر ضلع اورکزئی زاہد اللہ شاہ نے اورکزئی ہیڈ کوارٹر جرگہ ہال میں منعقدہ انٹر ڈسٹرکٹ سپورٹس گالا کے تقریب اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔

انہوں نے کہا کہ ضلع اورکزئی کے طلباء نے ہمارے پاس سکالر شپ فارمز جمع کئے ہیں مگر سال 2018 اور 2019 سکالر شپ کی مد میں ہمیں بالکل فنڈ نہیں ملا جبکہ ہم نے صوبائی حکومت سے 2018 اور 2019 سکالر شپ کیلئے 3 کروڑ 20 لاکھ 21 ہزار 6 سو روپے ڈیمانڈ کیے تھے مگر ابھی تک نہیں ملے ہیں۔