لوڈشیڈنگ کیخلاف سپین وام کے قبائل کا گرینڈ جرگہ، احتجاج کی دھمکی

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

میرعلی سب ڈویژن تحصیل سپین وام کے قبائل نے 23 گھنٹے بجلی لوڈشیڈنگ اور سپین وام لائن ون اور ٹو پر کام شروع نہ ہونے کے خلاف احتجاجی گرینڈ جرگہ ہوا اور شرکاء نے مطالبات کی عدم منظوری کی صورت میں سڑکوں پر نکلنے کا اعلان کردیا۔

جرگہ کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے تحصیل سپین وام جرگہ کے سربراہ ملک یوسف ہارون وزیر کا کہنا تھا کہ گھنٹوں گھنٹوں غیر اعلانیہ بجلی بندش سے مساجد اور گھروں میں پانی ناپید ہو چکا ہے جبکہ عوام کو وضو کیلئے بھی پانی دستیاب نہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ فاٹا کے صوبہ میں ضم ہونے کے بعد یہ اُمید پید ہو گئی تھی کہ اب میر علی سب ڈویژں میں تمام تر بنیادی مسائل حل ہو جائیں گے اور عوام کو درپیش بجلی کا مسئلہ بھی حل ہوگا لیکن گذشتہ کئی سالوں سے میر علی بجلی لائن ون اور ٹو پر اب تک کام شروع نہ ہوسکا جس کی وجہ سے عوام کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جبکہ 23 گھنٹے بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ سے گھریلو مشکلات میں مزید اضافہ ہوا ہے.

انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت اور وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے ضم اضلاع اجمل خان وزیر سب ڈویژن میرعلی تحصیل سپین وام میں جاری بجلی کے ظالمانہ لوڈشیڈنگ کا نوٹس لیکر اقدامات اُٹھائیں بصورت دیگر عوام اور مشران کے ساتھ سڑکوں پر نکل کر احتجاج سے گریز نہیں کریں گے۔