شمالی وزیرستان میں ہزاروں گھوسٹ اساتذہ کا انکشاف

شمالی وزیرستان میں ہزاروں گھوسٹ اساتذہ کا انکشاف ہوا ہے ، گھوسٹ اساتذہ گزشتہ کئی سالوں سے گھر بیٹھے تنخواہیں بھی وصول کر رہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق ڈپٹی کمشنر کاکہنا ہے کہ اب تک شمالی وزیرستان میں 2429 گھوسٹ اساتذہ کی نشاہدہی ہوگئی ہے، 1554 مرد اور 975 زنانہ اساتذہ بغیر ڈیوٹی تنخواہیں لینے لگے ۔

ذرائع کاکہنا ہے کہ طلبہ کا مستقبل داؤ پر ہے وہیں قومی خزانے کو سالانہ کروڑوں روپے کا نقصان ہورہا ہے .

اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر نے گھوسٹ اساتذہ کا ڈیٹا ڈسٹرکٹ مانیٹرنگ آفیسر کو ارسال کردیا ، ڈپٹی کمشنر نے گھوسٹ اساتذہ کا گزشتہ ایک سال کا مکمل ریکارڈ جمع کرنے کی بھی ہدایت کردی ، 2429 گھوسٹ اساتذہ میں مختلف گریڈ کے اساتذہ شامل ہیں ۔

ذرائع کاکہنا ہے کہ اساتذہ بااثر ہونے کی وجہ سے محکمہ تعلیم بھی بے بس نظر آتاہے جبکہ حکام محکمہ تعلیم کا بتانا ہے کہ ملازمین کی نشاہدہی ہوگئی ہے اب کارروائی ہوگی، کسی کو گھر بیٹھے تنخواہیں نہیں دینگے۔