ضلع کرم : عمائدین اور سیاسی و سماجی تنظیموں کا بدامنی کے واقعات کے خلاف امن واک کا فیصلہ

ضلع کرم کے عمائدین اور سیاسی و سماجی تنظیموں نے بدامنی کے واقعات کے خلاف ہفتے کے روز امن واک کا فیصلہ کیا ہے اور کہا ہے کہ ضلع کرم مزید بدامنی کا متحمل نہیں ہو سکتا حکومت ضلعی انتظامیہ اور ریاستی ادارے عسکریت پسندی روکنے اور قیام امن کے لئے اقدامات اُٹھائیں.

پاراچنار میں مختلف سیاسی، سماجی اور مذہبی تنظمیوں کے رہنماؤں عبد الخالق پٹھان ، میر افضل خان ، طفیل شاہین ، علامہ شفیق مطہری ، وریخمین خان ، علامہ مزمل حسین اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ ضلع کرم میں ایک بار پھر عسکریت پسندی کے واقعات عوام کیلئے انتہائی تشویشناک عمل ہے اور عوام کسی صورت مزید بدامنی کے واقعات برداشت نہیں کر سکتے.

انہوں نے کہا ہے کہ ہماری نسلیں بدامنی میں جوان ہوگئی ہیں اس لئے قیام امن کیلئے تمام مکاتب فکر کے لوگ ایک بار پھر آگئے ہیں

رہنماؤں نے فیصلہ کیا کہ ہفتے کے روز 15 جون کو وسطی کرم سے امن واک شروع کیا جائے گا واک کے شرکاء مین روڈ سے پاراچنار پہنچیں گے ۔ جہاں وہ بدامنی کے واقعات کے خلاف اپنا احتجاج ریکارڈ کریں گے .

رہنماوں نے کہا کہ ضلع کرم کے لوگ بار بار بد امنی کے واقعات سے تنگ آچکے ہیں اس لئے ضلع کرم کے تمام مکاتب فکرکے لوگ یک اواز ہو کر بد امنی کے خلاف آواز اٹھا رہے ہیں