جنوبی وزیرستان میں آن لائن ای ڈومیسائل بنوانا شہریوں کیلئے درد سر بن گیا

جنوبی وزیرستان میں آن لائن ای ڈومیسائل بنوانے  میں طالب علموں اور  خواتین کو مشکلات کا سامنا ہے۔

خیبر پختونخوا حکومت کے محکمہ داخلہ کی ہدایات پر ضلعی انتظامیہ نے 21 مارچ سے ای ڈومیسائل بنانے کیلئے جاری کردہ پالیسی کے تحت اپنے کام کا آغاز تو کردیا مگر ای ڈومیسائل کے پیچیدہ مراحل نے لوگوں کو مشکل سے نکالنے کی بجائے ان کی مشکلات میں مزید اضافہ کردیا۔

آن لائن ای ڈومیسائل کیلئے ب فارم کی شرط سے مقامی لوگوں کو ڈومیسائل بنوانے میں مشکلات کا سامنا ہے جب کہ ضلع  میں 18 سال سے زائد عمر کے شخص کا ب فارم  نہ بننا لوگوں کیلئے الگ مصیبت بن گیا ہے۔

اسسٹنٹ کمشنر وانا فیصل اسماعیل نے جیو نیوز کو بتایا کہ ضلعی انتظامیہ کو شہریوں کی جانب سے ای ڈومیسائل کے حوالے سے کافی شکایتیں موصول ہورہی ہیں ہم نے اس مسئلے کے حل کیلئے محکمہ داخلہ کے پی کو  خط لکھ کر   آگاہ کردیا ہے۔