بلدیاتی انتخابات، انتخابی فہرستوں کی سالانہ نظرثانی پر کام شروع

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے آئندہ بلدیاتی انتخابات کی تیاریوں کے سلسلے میں انتخابی فہرستوں کی سالانہ نظرثانی پر کام شروع کردیا ہے اور ان فہرستوں کو عوام کے معائنے کے لئے ڈسپلے مراکز میں رکھ رہے ہیں۔

الیکشن کمشنر خیبر  پختوننخوا پیر مقبول احمد نے قومی ووٹرز ڈے کے موقع پر بحیثیت مہمان خصوصی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انتخابی فہرستوں کو ڈسپلے کرنے کا مقصد یہ ہے کہ ووٹرز اپنے کوائف معلوم کرکے درستگی کریں اور اگر کسی کا نام موجود نہ ہو تو اپنا نام ووٹر لسٹ میں شامل کرسکے۔

انہوں نے کہا کہ ووٹ کی اہمیت کو اجاگر کرنے کے لیے الیکشن کمیشن آف پاکستان نے 7 دسمبر کو ووٹروں کے قومی دن کے طور پر منانے کا فیصلہ کیا ہے تا کہ قوم کو ووٹ کی اہمیت سے آگاہ کیا جاسکے اور زیادہ سے زیادہ لوگوں کی جمہوری عمل میں شرکت کو یقینی بنایا جا سکے اور آج کی یہ تقریب بھی اسی سلسلے کی کڑی ہے۔

صوبائی الیکشن کمشنر نے کہا کہ الیکشن ایکٹ 2017کے مطابق جس حلقہ میں خواتین کو حق رائے دہی سے محروم رکھا جائے یا اس حلقہ میں خواتین کے ڈالے گئے ووٹوں کی شرح 10 فی صد سے کم ہوگی تو الیکشن کمیشن اس حلقہ کے نتیجہ کو کالعدم قرار دے سکتا ہے۔

پیر مقبول احمد نے بتایا کہ ہمارے صوبے میں مرد ووٹرز اور خواتین ووٹرز کے مابین فرق تقریباً 26 لاکھ ہے جسے کم کرنے کے لئے الیکشن کمیشن نے نادرا و دیگر اداروں کے تعاون سے خیبرپختوننخوا کے 16اضلاع میں ٖFemale NIC Campaign شروع کی ہے جس کے تحت دور افتادہ علاقوں میں خواتین کی سہولت کے لئے (Mobile Registration Vans MRVs) بھی فراہم کیا جا رہا ہے۔