اسمگلنگ روک تھام میں آرمی چیف پوری طرح ہمیں سپورٹ کررہے ہیں، شہباز شریف

وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ اسمگلنگ کا خاتمہ کیے بغیر معیشت مستحکم نہیں ہوسکتی، روک تھام کے لیے تمام صلاحیتیں بروئے کار لائیں گے، اسمگلنگ کی روک تھام میں آرمی چیف کی معاونت پر شکر گزار ہوں۔

نجی ٹی وی کے مطابق وزیراعظم شہید کسٹمز انسپکٹر سید حسنین علی ترمذی کی رہائش گاہ ایبٹ آباد پہنچے جہاں شہبازشریف نے شہید کے اہل خانہ سے ملاقات کی اور علی ترمذی کے اہلخانہ سے فاتحہ خوانی کی۔

شہباز شریف نے کہا کہ حسنین علی ترمذی نے فرائض کی ادائیگی میں جام شہادت نوش کیا، شہید سید حسنین علی ترمذی کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، انہوں نے اسمگلروں کا مقابلہ کرتے ہوئے اپنی جان قربان کی، حسنین علی ترمذی پوری قوم کا ہیرو ہے۔

وزیراعظم نے مزید کہا کہ اسمگلرز کا مکمل طورپر خاتمہ یقینی بنائیں گے، اسمگلنگ کے خاتمے کے لیے پوری طرح متحد ہیں، اس ناسور کو جڑ سے اکھاڑ پھینکیں گے، جب تک اس کا خاتمہ نہیں ہوگا ہماری معیشت مضبوط نہیں ہوگی۔ شہیدوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ ان واقعات میں 8 افراد شہید ہوئے، ایسے واقعات کی مکمل طورپر بیخ کنی کی جائے گی، اسمگلرز ہمارے مشترکہ دشمن ہیں ان کے خلاف ہمیں اپنی کمر کسنی ہوگی، آج ہمیں عہد کرنا ہوگا کہ اسمگلنگ کا خاتمہ کرکے ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کریں گے۔

وزیراعظم نے کہا کہ جو پیکج شہدا کا پنجاب میں بنایا ہے وہی خیبرپختونخوا کو دیا ہے، شہید کے بچوں کو فی الفور ایک کروڑ روپے دیں گے، ایک کروڑ 35 لاکھ روپے کا گھر بنا کردیں گے، ان کے بچوں کی تعلیم اور علاج فری ہوگا۔

شہباز شریف نے مزید کہا کہ وزیر داخلہ محسن نقوی اسمگلنگ کے خاتمے کے لیے متحرک ہیں، اسمگلنگ کا خاتمہ مکمل طور پر یقینی بنائیں گے، صوبائی حکومتوں کے ساتھ مل کر اسمگلنگ کا خاتمہ کریں گے۔

وزیراعظم شہبازشریف کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا حکومت، وزیراعلیٰ اور آئی جی کا شکر گزار ہوں، پاکستان کے سپہ سالار جنرل سید عاصم منیر کا بھی شکر گزار ہوں، آرمی چیف جنرل سید عاصم منیر پوری طرح ہمیں سپورٹ کررہے ہیں۔