بالی ووڈ سے مجھے شہرت ملی لیکن زندگی سے برکت ختم ہوگئی

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin

بالی ووڈ کی سپرہٹ فلم ’دنگل‘ سے شہرت پانے والی اداکارہ زائرہ وسیم نے فلمی دنیا سے کنارہ کشی اختیار کرلی۔

سری نگر سے تعلق رکھنے والی بالی وڈ اداکارہ زائرہ وسیم نے بالی وڈ چھوڑنے کا اعلان سوشل میڈیا پر جاری طویل بیان کے ذریعے کیا۔

سوشل میڈیا پر اپنی طویل پوسٹ میں انہوں نے لکھا کہ فلمی کیریئر میں عزت اور شہرت ملی ہے لیکن اس کی وجہ سے مذہب سے دور ہورہی تھی۔

انہوں نے پیغام میں کہا کہ فلمی دنیا کی وجہ سے ان کی زندگی سے برکت ختم ہورہی تھی جس کے باعث وہ بالی وڈ سے دوری اختیار کررہی ہیں۔

انہوں نے لکھا تھا کہ’میرے بولی وڈ میں 5 برس مکمل ہوگئے ہیں اور اس موقع پر میں اعتراف کرنا چاہتی ہوں کہ میں اپنے کام سے ملنے والی شناخت پر خوش نہیں، طویل عرصے سے مجھے لگ رہا تھا کہ میں کوئی اور شخصیت بننے کی جدوجہد کررہی ہوں، میں نے اب ان چیزوں کو کھوجنا اور محسوس کرنا شروع کیا ہے جن کے لیے میں اپنا وقت، کوششیں اور جذبات مختص کرنا چاہتی ہوں اور ایک نئے طرز زندگی کو برقرار رکھنے کی کوشش کررہی ہوں’۔

 

انہوں نے مزید لکھا ‘مجھے یہ احساس ہونے لگا شاید میں اس انڈسٹری میں اچھی طرح فٹ ہوجاﺅں مگر میں یہاں سے تعلق نہیں رکھتی، اس شعبے سے مجھے بہت محبت، تعاون اور ستائش ملی، مگر اس کے ساتھ ساتھ یہ مجھے لاعلمی کے راستے پر لے گیا، کیونکہ میں خاموشی اور لاشعوری طور پر ایمان سے باہر نکلنے لگی’۔

زائرہ وسیم کا کہنا تھا ‘میں مسلسل اپنے خیالات اور وجدان سے مفاہمت کے لیے اپنی روح سے جنگ کررہی تھی تاکہ اپنے ایمان کا تصور مستحکم کرسکوں مگر میں بری طرح ناکام ہوئی، اور ایسا صرف ایک بار نہیں بلکہ سو بار ہوا۔ میں ایسے ماحول میں کام کرتی رہی جو مسلسل میرے ایمان میں مداخلت کرتا رہا، جس سے میرا مذہب سے تعلق خطرے میں پڑگیا، مگر میں اسے نظرانداز کرکے آگے بڑھتے ہوئے خود کو قائل کرنے کی کوشش کرتی رہی کہ میں ٹھیک کررہی ہوں اور اس میں متاثر نہیں ہوں گی، مگر اس سے میری زندگی سے رحمت ختم ہوگئی’۔

دوسری جانب زائرہ وسیم کے اعلان کے بعد کئی نامور بھارتی شخصیات نے اداکارہ کے فیصلے پر ان کو سپورٹ کیا جبکہ کئی نے انہیں شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

معروف بھارتی اداکارہ روینہ ٹنڈن نے زائرہ وسیم کو ان کے فیصلے پر ناشکرہ کہا جبکہ اپنی ٹویٹ میں یہ بھی لکھا کہ وہ اپنے منفی خیالات اپنی حد تک رکھیں۔

بولی وڈ اداکار سدھارتھ نے بھی زائرہ کو ان کے بولی وڈ چھوڑنے پر نیک خواہشات کا اظہار کیا جبکہ اپنی ٹویٹ میں یہ بھی لکھا کہ ‘فن ہماری زندگی ہے، ہم مذہب کو اس اسے دور رکھنے کی کوشش میں لگے رہتے ہیں، اگر آپ کے مذہب نے آپ کو ایسا کرنے پر مجبور کیا تو شاید آپ اس انڈسٹری سے تعلق رکھتی ہی نہیں تھیں’۔

بھارتی صحافی فریدون کا کہنا تھا کہ ‘زائرہ میں آپ کے فیصلے کی عزت کرتا ہوں، لیکن میں ان وجوہات سے رضامند نہیں جو آپ نے بولی وڈ چھوڑنے کے لیے دی، مجھے امید ہے کہ آپ اپنے فیصلے پر غور کریں اور واپس بولی وڈ کا حصہ بننے کے بارے میں سوچیں’۔

یاد رہے کہ زائرہ وسیم نے اپنا فلمی کیریئر 2016 میں فلم ’دنگل‘ سے شروع کیا جس میں انہوں نے عامر خان کی بیٹی کا کردار کیا تھا اور ان کی جاندار اداکاری کو مداحوں نے بے حد پسند کیا تھا۔

اس کے بعد اداکارہ نے ایک اور سپر ہٹ فلم ’سیکرٹ اسٹار‘ میں بھی مرکزی کردار ادا کیا۔ زائرہ وسیم کو ’دنگل‘ میں اداکاری پر بہترین معاون اداکارہ کا نیشنل ایوارڈ بھی دیا گیا، اس کے علاوہ انہیں کئی فلمی ایوارڈ بھی ملے ہیں۔

دوسری جانب اداکارہ کے مینیجر نے دعویٰ کیا ہے کہ اداکارہ نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر کوئی بیان شیئر نہیں کیا، جبکہ ان کے اکاؤنٹس بھی ہیک کرلیے گئے ہیں۔

بھارتی میڈیا کے مطابق اداکارہ زائرہ وسیم نے بالی ووڈ چھوڑنے کا فیصلہ نہیں کیا۔ انہوں نے کہا کہ ان کی سوشل میڈیا ٹیم معاملے کو دیکھ رہی ہے،