آئی ایم ایف نے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے تحت منصوبوں کی شفافیت پر اعتراض اٹھادیا

عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے تحت منصوبوں کی شفافیت پر اعتراض کرتے ہوئے تجاویز پیش کردیں۔

تفصیلات کے مطابق عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے تحت منصوبوں کی شفافیت پراعتراض اٹھادیا۔

ذرائع نے کہا ہے کہ پی ایس ڈی پی کےتحت منصوبوں میں سرمایہ کاری کی مکمل تفصیل دستیاب نہیں۔

اس حوالے سے آئی ایم ایف نے تجاویز دیتے ہوئے کہا کہ پی ایس ڈی پی کے منصوبوں میں شفافیت کی اشد ضرورت ہے، آئندہ مالی سال بجٹ میں ترقیاتی منصوبوں کی دستاویز کومؤثر بنایا جائے۔

آئی ایم ایف کی جانب سے تجویز میں کہا گیا ہے کہ بجٹ دستاویزمیں ترقیاتی منصوبوں کی لوکیشن،ڈیولپمنٹ فارمیٹ کوشامل کیاجائے اور آئندہ مالی سال ترقیاتی منصوبوں کےبجٹ کومدنظر رکھ کرپی ایس ڈی پی میں شامل کیا جائے۔

ذرائع پلاننگ کمیشن نے کہا ہے کہ مالیاتی مشکلات کےباعث منصوبوں کی تعمیر کے مقاصد سے بھی آئی ایم ایف کو آگاہ کیا جائے گا، وزارت خزانہ ،منصوبہ بندی آئی ایم ایف شرط پر عملدرآمد کیلئے پیپرورک مکمل کریں گی، آئندہ مالی سال بجٹ پرآئی ایم ایف نے ترقیاتی بجٹ کیلئےتجاویز دی ہیں۔