باجوڑ میں جے یو آئی امیدوار کی گاڑی کے قریب بم دھماکا

خیبر پختونخوا کے ضلع باجوڑ میں جمعیت علما اسلام (جے یو آئی) کے امیدوار قاری خیراللّٰہ کی گاڑی کے قریب بم دھماکا ہوا، دھماکے میں جے یو آئی رہنما محفوظ رہے۔

ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر (ڈی پی او) باجوڑ کاشف ذوالفقار کے مطابق باجوڑ کی تحصیل ماموند کے علاقے برکمر میں جے یو اۤئی کے امیدوار قاری خیر اللّٰہ کی گاڑی کو ریموٹ کنٹرول بم سے نشانہ بنایا گیا۔

ڈی پی او باجوڑ کا کہنا ہے کہ دھماکے میں صوبائی اسمبلی کی نشست حلقہ پی کے 19 سے جمعیت علمائے اسلام کے امیدوار محفوظ رہے تاہم دھماکے میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا۔

ڈی پی او نے بتایا کہ دھماکا خیز مواد سڑک کنارے نصب کیا گیا تھا، جس کے پھٹنے سے گاڑی کو جزوی نقصان پہنچا، واقعے کے بعد پولیس نے سرچ اۤپریشن شروع کر دیا ہے۔

دوسری جانب جے یو آئی کے مرکزی ترجمان اسلم غوری نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے بیان دیا کہ وزارتِ داخلہ اپنی ذمہ داریاں کیوں پوری نہیں کر رہی، جے یو آئی کو کیوں ٹارگٹ کیا جارہا ہے، الیکشن کمیشن کہاں ہے اپنی ذمہ داریاں کیوں پوری نہیں کررہا۔

انہوں نے مزید کہا کہ امن وامان کی صورتحال خراب کرکے دھاندلی کی نئے طریقے اختیار کئے جارہے ہیں، جے یو آئی کی مقبولیت سے کچھ قوتیں خائف ہیں، ہماری شرافت کو کمزوری نہ سمجھا جائے۔