غیر قانونی پاسپورٹ، حساس ڈیٹا کی چوری روکنے کیلئے پیکا ایکٹ نافذ

وفاقی حکومت نے غیرقانونی پاسپورٹ اور حساس ڈیٹا کی چوری روکنے کیلئے بڑا فیصلہ کر لیا۔ وفاقی حکومت نے افغانیوں اور غیرملکیوں کیلئے پاکستانی پاسپورٹس کا راستہ مستقل بند کرنے کیلئے پیکا ایکٹ نافذ کر دیا۔

وفاقی کابینہ نے پاسپورٹ دفاتر کے 6 سیکشنز پر انسداد الیکٹرانک کرائمز ایکٹ نافذ کردیا۔ اسلام آباد، لاہور اور کراچی کے اہم دفاترمیں مخصوص افسروں کے علاوہ داخلہ بند کردیا گیا۔

وفاقی کابینہ سے وزارت داخلہ کی سمری پر سرکولیشن کے ذریعے منظوری لی گئی۔ وفاقی حکومت نے امپاس کے 6 سیکشنز کے انفراسٹرکچر کو انتہائی حساس قراردیدیا۔

سکیورٹی کلیئرنس کے حامل مخصوص افسروں اور ملازمین کو صرف ان سیکشنز تک رسائی ہوگی۔ حکومت کے اس اقدام سے حساس معلومات، پاسپورٹ، ویزا، شہریت اور درخواست گزار کا ڈیٹا چوری نہیں ہوسکے گا۔