خیبر پختونخوا حکومت نے غیر قانونی مقیم افغانوں کا ڈیٹا مرتب کرلیا

خیبر پختونخوا حکومت نے غیر قانونی مقیم افغانوں کا ڈیٹا مرتب کرلیا، محکمہ داخلہ و قبائلی امور نے وزارت داخلہ کو ڈیٹا ارسال کر دیا۔

محکمہ داخلہ نے صوبے کے 32 میں سے اکثر اضلاع میں مقیم افغانوں کا ڈیٹا ارسال کر دیا۔ صوبے کے بڑے شہروں میں 22 ہزار 347 غیر قانونی مقیم افغانوں کی نشاندہی کی گئی۔

دستاویز کے مطابق  پشاور میں 17 ہزار 832 غیر قانونی مقیم افغانوں کی نشاندہی ہوئی، خیبر میں 1523، کوہاٹ 1228، لوئر وزیرستان میں 607 افغانوں کی نشاندہی کی گئی۔

محکمہ داخلہ کا کہنا ہے کہ بٹگرام، ٹانک، تورغر، کوہستان صوابی، وزیرستان، مانسہرہ سے ڈیٹا مرتب کیا جا رہا ہے۔

دسرے جانب غیر قانونی طور پر پاکستان میں مقیم غیر ملکیوں کے انخلاء کا سلسلہ جاری ہے۔

کراچی میں سلطان آباد میں ہولڈنگ کیمپ سے مزید 105 افراد کو چمن بارڈر روانہ کردیا گیا۔

حکام کے مطابق 105 افراد میں 21 خواتین، 55 بچے اور 29 مرد شامل ہیں۔ حکام نے بتایا کہ کراچی میں ہولڈنگ کیمپ سے روانہ کیے گئے غیرملکیوں کی تعداد 837 ہوگئی ہے۔

حکام کے مطابق ہولڈنگ کیمپ میں موجود مزید غیر ملکیوں کا ریکارڈ مرتب کیا جا رہا ہے۔