وزیر جنگلات کی فاریسٹ آرڈیننس اور جنگلات بچائو پالیسی پر عملدرآمد تیزی سے جاری

آزاد کشمیر کے وزیر جنگلات اکمل حسین سرگالہ کی فاریسٹ آرڈیننس اور جنگلات بچائو پالیسی پر عملدرآمد تیزی سے جاری، محکمہ جنگلات مظفرآباد کے لچھراٹ رینج میں نقصان جنگل کی زیر التواء فائلوں کو یکسو کرتے ہوئے 28 لاکھ روپے خزانہ سرکار میں جمع کروا دیے گئے.

رینج آفیسر راجہ نذیر خان نے ماتحت عملہ کے ہمراہ لچھراٹ رینج میں ماضی میں ہونے والے نقصان جنگل کی فائلیں جو سالہا سال سے زیر التواء چلی آ رہی تھیں، وزیر جنگلات کی ہدایات کے مطابق ان فائلوں پر کارروائی عمل میں لاتے ہوئے ذمہ داران سے جرمانے کی رقم مبلغ 28 لاکھ روپے ریکور کر کے خزانہ سرکار میں جمع کروا دی جبکہ دیگر زیر التواء فائلوں پر بھی تیزی سے کام جاری ہے۔

وزیر جنگلات اکمل سرگالہ کو محکمہ جنگلات کا پورٹ فولیو ملنے کے بعد محکمانہ امور میں بہتری دیکھی جا رہی ہے اور سالہا سال سے محکمہ کے اندر نقصان جنگل کی زیر التواء فائلوں کو یکسو کرنے کے علاوہ جنگلات کے بچائو کے لیے محکمہ متحرک ہو چکا ہے.

نقصان جنگل کی زیر التواء فائلوں کی یکسوئی سے قومی خزانے میں کروڑوں روپے کی آمدن متوقع ہے.

وزیر جنگلات کی ہدایات کے مطابق ناظم جنگلات مظفرآبار سرکل ارشد خان نے اپنے ماتحت عملہ کو مکتوب کے ذریعے ہدایت کی ہے کہ وہ نقصان نگل کی جملہ فائلوں کو یکسو کرتے ہوئے انہیں منطقی انجام تک پہنچایا جائے جس کے بعد زیر التواء  فائلوں پر کارروائی کے حوالہ سے مظفرآباد سرکل سرفہرست ہے۔ .

رینج آفیسر راجہ نذیر خان خود لچھراٹ رینج کے جنگلات کا معائنہ کر رہے ہیں اور ساتھ ہی زیر التواء فائلوں کو یکسو کرتے ہوئے ذمہ داران سے جرمانے کی رقم قومی خزانے میں جمع کروا رہے ہیں جبکہ مظفرآباد سرکل کی دیگر رینج میں بھی وزیر جنگلات اور ناظم جنگلات کی ہدایات پر سختی سے عملدرآمد جاری ہے۔