نادرا نے 18 ہزار سے زائد غیر قانونی شناختی کارڈز منسوخ کر دیئے

نادرا نے 18 ہزار سے زائد غیر قانونی شناختی کارڈز منسوخ کر دیئے ہیں۔ جعلی شناختی کارڈ اور دیگر سرکاری دستاویزات کے حامل افراد کی نشاندہی ہونے پر تنسیخ کی گئی۔

نادرا حکام کے مطابق پاکستان طویل عرصے سے جعلی شناختی کارڈ کے حامل افراد اور مجرمان سے متاثر ہو رہا تھا، جعلی شناختی کارڈ بنوانے کا بنیادی مقصد ملکی سکیورٹی اور استحکام کو نقصان پہنچانا تھا۔

نادرا حکام نے مزید بتایا کہ دیگر ممالک کی طرح یہ مسئلہ پاکستان کیلئے بھی مستقل تشویش کا باعث ہے، جعلی دستاویزات، کوائف کی تصدیق کا طریقہ کار نہ ہونا جعلی شناختی کارڈ کے اجراء کا باعث بنتے ہیں۔

نادرا حکام کا مزید کہنا ہے کہ مالی فوائد کیلئے چند ملازمین کی بدعنوانی بھی بعض اوقات مسئلے میں اضافے کا باعث بنی، جس کو ٹریس کرنے کے بعد مذکورہ 18 ہزار سے زائد کارڈز منسوخ کئے گئے ہیں۔